اے ڈی بی کی پاکستان کیلئے 70کروڑ ڈالر قرض کی منظوری

اے ڈی بی کی پاکستان کیلئے 70کروڑ ڈالر قرض کی منظوری

ایشیائی ترقیاتی بینک کی ایشیا پیسیفک ویکسین ایکسس سہولت کے تحت کرونا ویکسین کی خریداری کے لیے 70 کروڑ ڈالر فراہم کیے جائیں گے۔

 

یہ اعلان اے ڈی بی کے ڈائریکٹر جنرل یوجینیو زوخوف نے کیا جنہوں نے منگل کو وزیر برائے اقتصادی امور عمر ایوب خان سے ملاقات کی۔

 

انہوں نے بتایا کہ اے ڈی بی پاکستان کو اگلے پانچ سالوں کے لیے شہری خدمات کے شعبوں، آفات کے خطرے میں کمی اور پالیسی پر مبنی پروگرام مختلف ترقیاتی منصوبوں کے لیے تقریباً 10 ارب ڈالر کی تازہ امداد فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے جس پر اقتصادی امور کے وزیر نے حکومت پاکستان کو مسلسل تکنیکی اور مالی مدد فراہم کرنے پر اے ڈی بی کی تعریف کی۔

 

 وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت اہل آبادی کو زیادہ سے زیادہ ویکسی نیشن کوریج فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے اور اس بات پر روشنی ڈالی کہ تیزی سے شہری کاری اور آبادی میں اضافے کے پیش نظر شہری خدمات کا شعبہ حکومت کی اعلیٰ ترجیح ہے۔

 

واضح رہے اس وقت اے ڈی بی توانائی، سڑک، ٹرانسپورٹ، زراعت و آبپاشی، شہری خدمات، تعلیم، صحت اور سماجی تحفظ میں 6.4 ارب ڈالر کے 32 ترقیاتی منصوبوں کی مالی معاونت کر رہا ہے۔ عمر ایوب نے پاکستان کے لیے اے ڈی بی کی مسلسل حمایت کو سراہتے ہوئے ایشیائی ترقیاتی بینک کے ڈائریکٹر جنرل کو یقین دلایا کہ حکومت معیشت کے متعدد شعبوں بشمول توانائی، کیپٹل مارکیٹ، تجارتی مسابقت، گھریلو وسائل کو متحرک کرنے اور گورننس میں ڈھانچہ جاتی اصلاحات کو مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

 

اے ڈی بی کے ڈائریکٹر جنرل نے افغانستان میں کام کرنے والے اے ڈی بی کے اہلکاروں کو کامیابی سے نکالنے میں حکومت پاکستان کی حمایت کو بھی سراہا۔ ملاقات ے دوران وزیر برائے اقتصادی امور، ڈائریکٹر جنرل، اے ڈی بی نے ایشیائی ترقیاتی بینک اور پاکستان کی ترقیاتی شراکت داری کو مزید مضبوط کرنے کے طریقوں پر بات چیت جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

 

کچھ روز پہلے ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) نے پاکستان کو انٹیگریٹڈ سوشل پروٹیکشن ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت احساس پروگرام کے لیے 60 کروڑ امریکی ڈالر فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

 

وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور عمر ایوب خان یہ پروگرام مربوط اور منظم انداز میں اپنے احساس پروگرام (سماجی تحفظ اور غربت میں کمی) سے اعلیٰ ترجیحات کو نافذ کرنے کی حکومت کی کوششوں کی حمایت کرے گا۔

 

کنٹری ڈائریکٹر نے کہا کہ اس پروگرام کے تحت سماجی تحفظ اور آب و ہوا کی لچک کے لیے ادارہ جاتی صلاحیت کو بھی مضبوط کیا جائے گا۔