چوک یادگار پشاور میں اے این پی کی دو روزہ بھوک ہڑتال اختتام پذیر

چوک یادگار پشاور میں اے این پی کی دو روزہ بھوک ہڑتال اختتام پذیر

پشاور۔۔۔عوامی نیشنل پارٹی کے زیراہتمام ملک میں جاری بدترین مہنگائی، بے روزگاری اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف چوک یادگار پشاور میں دو روزہ بھوک ہڑتالی کیمپ اختتام پذیر ہوا۔

 

جمعرات کے سہ پہر سے شروع ہونیوالے ہڑتالی کیمپ میں سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر حاجی غلام احمد بلور نے رات چوک یادگار پشاور میں کارکنا ن کے ہمراہ گزاری۔

 

جمعة المبارک کے روز صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردارحسین بابک کی درخواست پر حاجی غلام احمد بلور نے بھوک ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کیا۔ اس موقع پر اے این پی کے صوبائی و ضلعی رہنما، تاجر تنظیموں کے ذمہ داران اور کارکنان کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔

 

اختتامی تقریب سے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک، سینئر رہنما حاجی غلام احمد بلور اور تاجر تنظیموں کے نمائندوں نے خطاب کیا۔

 

اس موقع پر اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک نے کہا کہ دنیا دیکھ رہی ہے کہ یہاں عوام بجلی کے بل دینے سے قاصر ہیں، دوائیاں، خوراکی مواد، غیرخوراکی مواد غرض ضرورت کی ہر چیز مہنگی کردی گئی ہے۔ یہ کوئی سیاسی پوائنٹ سکورنگ نہیں بلکہ عوام مزید اس بوجھ کو برداشت کرنے کے قابل نہیں ہے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور پاکستانی قوم پر ایسے حکمران مسلط کئے گئے ہیں جو عوامی مشکلات نہیں دیکھ رہے۔ عوامی نیشنل پارٹی اس ظلم کے خلاف عوام کے تعاون سے ہر حد تک جائیں گی۔ خیبرپختونخوا میں تیل، گیس، بجلی، معدنیات، فصلیں، سیاحت غرض آمدن کے خزانے پشتون خطے میں موجود ہیں لیکن پشتون قوم کو ان کا حق نہیں دیا جارہا۔ 6000 میگاواٹ بجلی پیدا کرنیوالا صوبہ بدترین لوڈشیڈنگ کا سامنا کررہا ہے۔

 

سردارحسین بابک نے کہا کہ یہ جنگ عوام کی جنگ ہے، کسی ایک فرد کی جنگ نہیں۔ پشتونوں پر تجارت کے راستے بند کئے گئے ہیں۔ پاک بھارت تجارتی راستے کھلے جبکہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارتی راستے بند پڑے ہیں۔ کراچی بندرگاہ پر تجارت جاری ہے، سندھ، پنجاب کے تجار اپنا کاروبار کررہے ہیں لیکن پشتونوں پر تجارتی راستے بند کئے گئے ہیں اور انکے کاروبار تباہ کردیے گئے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ پاک افغان تجارت شروع کی گئی تو پشاور تجارت کا عالمی مرکز بن جائیگا، لاکھوں پشتون روزگار حاصل کرسکیں گے، دہشتگردی ختم ہوجائیگی، بے روزگاری ختم ہوسکتی ہے۔

 

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سینئر رہنما حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ ملک میں جاری بدترین مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی ہے۔ حکومت کو کوئی فکر نہیں اور نہ ہی کوئی پالیسی نظر آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی عوامی مشکلات کا ادراک کرتے ہوئے عوام کی خاطر میدان میں نکلی ہیں اور پوری قوم کو اس بدترین مہنگائی اور قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے خلاف نکلنا ہوگا تاکہ ان نااہل حکمرانوں سے چھٹکارا پایا جاسکے۔