کٹھ پتلی مسلط کرنے والے اللہ کے حضور معافی مانگیں، غلام احمد بلور

کٹھ پتلی مسلط کرنے والے اللہ کے حضور معافی مانگیں، غلام احمد بلور

پشاور (سٹاف رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے بزرگ رہنما حاجی غلام احمد بلور نے کہاہے آج پاکستان عجیب دوراھے پر کھڑاہے ملک سیاسی طور پر افراتفری کا شکار ہے اقتصادی اور معاشی حالت انتہائی ابتر ہے مہنگای آسمان کو چھو رہی ہے اور آٹا چینی گھی دالیں گوشت درمیانے طبقہ کی دسترس سے باہر ہو چکی ہیں۔

 

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ عوام اس مشکل صورتحال میں بجلی گیس کے بل ادا کرنے سے قاصر ہیں، پٹرول اور ڈالر تمام حدیں پھلانگ چکے ہیں جبکہ غریبوں کے چولہے ٹھنڈے پڑ چکے ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے عوام کا کوئی پرسان حال نہیں ایسا لگتا ہے ملک میں کوئی حکومت نام کی کوئی چیز ہی نہیں، حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک ہمیں ٹھینگا دکھا رہے ہیں، جگہ جگہ فوج کے جوان اور چھوٹے افیسر شہید ہو رہے ہیں اور بین الاقوامی سطح پر ملک  تنہائی کا شکار ہو چکا ہے ۔

 

انہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ پاکستان کے تمام قریبی دوست ممالک  منہ موڑ چکے ہیں،ریاست مدینہ بنانے والے ہمیں اپنا پرانا پاکستان واپس لوتا دیں،انہوں نے کہا کہ  ہمارے اپنے وہ ادارے جو کہ موجودہ حکمرانوں کو بنانے کے ذمہ دار ہیں وہ اللہ کے حضور اوراس قوم سے گڑ گڑاکر معافی مانگیں، اوروعدہ کریں کہ جو ظلم انہوں نے اس قوم پر کیا ہے آئندہ ایسا ظلم نہیں کریں گے۔

 

انہوں نے کہا کہ قوم کو حکمرانی حق واپس لٹادیں جو کہ انگریزوں نے اس قوم کو دیا تھا ،حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ امریکی سینیٹ میں پاکستان پر پابندیوں کا جو بل پیش ہو چکا ہے اگر وہ پاس ہو گیا تو  پاکستان کا زندہ رہنا نا ممکن ہو جائے گا۔

 

انہوں نے کہا کہ  ان تمام مسائل کا ایک ہی حل ہے کہ چیئرمین الیکشن کمیشن چیف جسٹس سپریم کورٹ اور اسٹبلشمنٹ کے نا خداؤں کے ساتھ مشورہ کر کے جلد از جلد نئے انتخابات کا اعلان کریں تاکہ ملک کو مزید تباہی و بربادی سے بچایا جا سکے، ملک پاکستان کو کچھ لوگوں کے کہنے کے مطابق چوروں سے لیکر ڈاکوؤں اور وہ نالائق اور اناڑی ڈاکوؤں کے حوالے کر دیا گیاہے۔