ہسپتالوں میں تیمارداری کورونا ویکسی نیشن سے مشروط

 ہسپتالوں میں تیمارداری کورونا ویکسی نیشن سے مشروط

 پشاور (سٹاف رپورٹر) کمشنر پشاور ڈویژن ریاض خان محسود کی زیرِ صدارت پشاور ڈویژن کے بڑے ہسپتالوں اور سیٹلائٹ سنٹرز میں جاری کورونا ویکسی نیشن سٹاک کی طلب ورسد اور جاری کرونا ویکسی نیشن کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا جس میں ڈپٹی کمشنر پشاور کیپٹن ریٹائرڈ خالد محمود ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر پشاور ڈاکٹر عظمت اور پشاور ڈویژن کے بڑے ہسپتالوں اور سیٹلائٹ سنٹرز کے سربراہان نے شرکت کی ۔اجلاس میں کمشنر پشاور ڈویژن کو ہسپتالوں میں جاری کورونا ویکسی نیشن مہم سٹاک کی موجودہ تعداد طلب ورسد کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔

 

اجلاس میں فیصلے کے گئے کہ ہسپتالوں میں کورونا سرٹیفکیٹ کے بغیر مریضوں کے تیمارداروں اور ملاقاتیوں کا داخلہ بند کردیا جائے اور اس فیصلے پر آج ہی سے عمل درآمد شروع کیا جائے اس کے علاوہ پہلی ڈوز لگانے والے افراد جن کے28دن مکمل ہو چکے ہیں اور انہوں نے دوسری ڈوز نہیں لگائی ان کا داخلہ بھی بند ہوگا حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں کورونا ویکسی نیشن کیلئے زیادہ تعداد میں آنے والے لوگوں کے پیش نظر کرونا ویکسی نیشن کاونٹرز کی تعداد6سے بڑھا کر12کردی گئی ای پی آئی کو ہدایات کی گئی کہ ہسپتالوں میں قائم پولیو کاونٹرز کو کرونا ویکسی نیشن کے لئے بھی استعمال کیا جائے ۔

 

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر پشاور ڈویژن ریاض خان محسود نے تمام متعلقہ افسران کو تاکید کی کہ ہسپتالوں میں کرونا ویکسین کی طلب ورسد پر کڑی نظر رکھی جائے اور طلب کے مطابق ویکسین کی فراہمی کو یقینی بنائی جائے ۔انہوں نے تمام ہسپتالوں کے سربراہان کو ہسپتالوں میں جاری کرونا ویکسی نیشن کی ازخود نگرانی کے احکامات جاری کئے ۔