نوازشریف کےشناختی کارڈپرویکسین کاجعلی اندراج

نوازشریف کےشناختی کارڈپرویکسین کاجعلی اندراج

لاہور میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے نام پر جعلی کورونا ویکسینیشن کے اندراج کا انکشاف ہوا ہے۔

 

جعلی ویکسینشین کا اندراج لاہور میں نواز شریف کے شناختی کارڈ پر ہوا ہے۔ نواز شريف کے شناختی کارڈ پر جعلی اندراج نادرا کے پورٹل پر بھی اپلوڈ کیا گیا ہے۔ سابق وزیراعظم کے شناختی کارڈ پر یہ اندراج گزشتہ روز 22 ستمبر کو کیا گیا۔

 

اپلوڈ کی گئی تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم کو سائنو ویک کی پہلی خوراک لگائی گئی۔  جس سینٹر کے نام پر ویکسین کا اندراج ہوا وہ کوٹ خواجہ سید اسپتال میں قائم کیا گیا ہے۔ کورونا ویکسین کیلئے بنائی گئی ہاٹ لائن پر بھی آگر مذکورہ شناختی کارڈ کا نمبر 1166 پر بھیج کر تصدیق کی جائے تو اس میں بھی ویکسینیشن کا اندراج دکھایا جاتا ہے۔

 

ترجمان پنجاب حکومت فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ واقعہ کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے، مریم نواز شریف محمد صفدر نے جعلی سازی میں پی ایچ ڈی کی ہوئی ہے۔ ممکن ہے کہ نواز شریف کے خاندان میں کسی نے شناختی کارڈ پر جعلی ویکسین سرٹیفیکیٹ حاصل کیا ہو۔

 

اطلاعات منظر عام پر آنے کے بعد ن لیگ کے سینیر رہنما محمد زبیر کا کہنا تھا کہ یہ نادرا، تبدیلی حکومت اور پنجاب کی ناکامی ہے کہ کیسے نواز شریف کے نام پر غلط اندراج کیا گیا۔ یہ اندراج محکمہ صحت کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

 

رپورٹ سامنے آنے پر پنجاب حکومت نے ویکسین سینٹر کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا۔ تحقیقات کے دوران دیگر جعلی اندراج سے متعلق بھی پوچھ گچھ کی جائے گی۔

 

واضح رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف سال 2019 سے علاج کیلئے لندن میں مقیم ہیں۔