بلدیاتی الیکشن کا دوسرا مرحلہ، حکومت پری پول دھاندلی کا منصوبہ بنا رہی ہے، ثمر بلور

بلدیاتی الیکشن کا دوسرا مرحلہ، حکومت پری پول دھاندلی کا منصوبہ بنا رہی ہے، ثمر بلور

پشاور(سٹاف رپورٹر)عوامی نیشنل پارٹی کی صوبائی ترجمان ثمرہارون بلور نے کہا ہے کہ سلیکٹڈحکومت نے بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے سے قبل پری پول دھاندلی کا آغاز کردیا ہے۔ انتخابات کے اعلان کے بعد 16 اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو تبدیل کرنا دھاندلی کے مترادف ہے۔


 

پشاور پریس کلب میں صوبائی انفارمیشن کمیٹی اراکین رحمت علی خان، صلاح الدین خان مومند، طارق افغان ایڈووکیٹ، حامد طوفان اور ثنا گلزار ایڈووکیٹ کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ثمر ہارون بلور نے کہا کہ پہلے مرحلے کے انتخابات میں ناکامی کے بعد نااہل حکومت دیگراضلا ع کے عوام کو بیوقوف بنانے کی کوشش کررہی ہے۔ جن اضلاع میں انتخابات ہونے جارہے ہیں صوبائی وزرا ان علاقوں کے دورے کر رہے ہیں اورترقیاتی منصوبوں کے اعلانات سے عوام کو دھوکہ دینے کی کوشش کررہے ہیں ۔

 

انہوں نے بتایا کہ دیر، ملاکنڈ اور دیگر شمالی علاقوں غیر آئینی زکوات کمیٹیاں بنائی گئی ہیں جن کا سارا اختیار پی ٹی آئی کارکنان کے ہاتھوں میں ہے۔ انتخابات سے قبل مذکورہ کمیٹیوں کی جانب سے زکوات فنڈکے نام پر لوگوں میں پیسے بانٹے جارہے ہیں۔اس طرح کے ہتھکنڈے انتخابات کو سبوتاژ کرنے کے سوا کچھ نہیں۔ الیکشن کمیشن غفلت کی نیند سے جاگے اور پی ٹی آئی کی پری پول دھاندلی کو روکے۔

 

ثمرہارون بلور نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت عوامی پیسے کو اپنے پروپیگنڈے کیلئے استعمال کررہی ہے اور مخالفین کو نشانہ بنانے کیلئے سرکاری طور 1200 سے زائد سوشل میڈیا ایکٹیوسٹس ہائر کررہی ہے۔ عوامی مسائل کے حل کیلئیحکومت کے پاس  فنڈ نہیں لیکن الیکشن چوری کرنے کیلئے اربوں روپے لٹائے جارہے ہیں۔ الیکشن کمیشن آئینی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے صوبائی حکومت کی ہٹ دھرمی کو روکے۔ عدلیہ سے اپیل کرتے ہیں کہ حکومت کی ووٹ پر ڈاکے کے خلاف سوموٹو ایکشن لے۔

 

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف ایک غیر جمہوری جماعت ہے ۔ خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات  میں شکست پرخان صاحب نے ایک قلم سے تنظیموں کو ختم کردیا۔ خان صاحب اخلاقی جرات کا مظاہرہ کرے اور انٹر پارٹی انتخابات کا اعلان کرے۔ ریاست مدینہ کے دعویدار فارن فنڈنگ کیس میں منہ چھپاتے ہوئے پھر رہے ہیں۔پارٹی کے نظریاتی کارکنان کو سائڈ لائن کرکے مافیاز کو نوازا جارہا ہے ۔جمہوریت کے چیمپیئنزپارٹی فنڈز کے بدلیڈونرز کوسرکاری منصوبے اور کنٹریکٹس دے رہے ہیں۔ پی ٹی آئی جواب دے کہ ممتاز مسلم کون ہے  اور کتنا فنڈ لے کر اسکو نتھیاگلی میں ہوٹل بنانے کا پراجیکٹ دیا گیا۔ عوام کو یہ بھی بتایاجائے کہ عارف نقوی کون ہے اور اس نے پی ٹی آئی کو کتنا پیسہ دیا ؟

 

سانحہ مری بارے ثمر ہارون بلور نے کہا کہ  اے این پی سانحہ مری کے متاثرین کے ساتھ غم کی اس گھڑی میں شریک ہے اور تمام واقعات کے شفاف تحقیقات کا مطالبہ کرتی ہے۔  حکومت برائے نام تحقیقات سے عوام کی آنکھوں میں دھول جھونک رہی ہے۔ وزیر اعلی پنجاب کے ساتھ وزیر اعلی خیبر پختونخوا بھی واقعے کا ذمہ دار ہے۔ کیا شدید برفباری کی وارننگ کے باوجود یہاں پر کوئی اجلاس بلایا گیا تھا؟ اور لوگوں کو مشکلات سے نکالنے کیا اقدامات اٹھائے گئے ۔ جو لوگ ذمہ داران ہیں  آج بھی اپنے منصبوں پر تعینات ہیں، انکی موجودگی میں شفاف تحقیقات کیسے ممکن ہے؟ جب تک شفاف تحقیقات نہیں ہوتی ڈی سی سمیت دیگر اعلی افسران کو عہدوں سے ہٹایا جائے۔

 

انہوں نے کہا کہ نئے ضم اضلاع کیعوام کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے۔ضلع خیبر تیراہ میں عوام برفباری کے باعث مشکلات سے دوچار ہیں لیکن ڈی سی خیبر کو ان علاقوں کا دورہ کرنے کی توفیق بھی نصیب نہیں ہوئی۔ عوام دوائیوں اور ضروریات زندگی کیلئے ترس رہے ہیں،پوچھنا چاہتے ہیں کہ پشاور میں بیٹھ کر ضلع خیبر کے انتظامی امورکس طرح چلائے جاسکتے ہیں؟۔ اے این پی مطالبہ کرتی ڈی سی  دفتر کو فی الفور خیبر منتقل کیا جائے اور مشکلات میں پھنسے عوام کی داد رسی کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں۔

 

پی پی پی وفد کی باچا خان مرکز پشاور آمد بارے انہوں نے کہا کہ پی پی پی نے عوامی نیشنل پارٹی  کو لانگ مارچ میں شرکت کی دعوت دی ہے، عوامی نیشنل پارٹی مل بیٹھ کر اور صلاح مشورے کے بعد پی پی پی کو اپنے فیصلے سے آگاہ کرے گی۔