ممنوعہ فنڈنگ کیس کے فیصلے کے خلاف اپیل پر لارجر بینچ تشکیل

ممنوعہ فنڈنگ کیس کے فیصلے کے خلاف اپیل پر لارجر بینچ تشکیل

اسلام آباد ہائیکورٹ نے تحریک انصاف ممنوعہ فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن کے فیصلے کیخلاف اپیل پر سماعت کےلیے لارجر بینچ تشکیل دیدیا۔

 

جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب اور جسٹس بابرستار قائمقام چیف جسٹس عامرفاروق کی سربراہی میں3ججز پر مشتمل لارجربینچ کا حصہ ہوں گے۔ لارجر بینچ پی ٹی آئی کی ممنوعہ فنڈنگ کیس فیصلے کیخلاف اپیلوں پرسماعت کرے گا۔

 

اسلام آباد ہائیکورٹ کے قائمقام چیف جسٹس عامر فاروق نےممنوعہ فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف درخواست پر سماعت کی۔ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد، صدر بار شعیب شاہین ہائیکورٹ میں پیش ہوئے۔

 

تحریک انصاف کے وکیل انور منصور نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دلائل دیئے کہ پی ٹی آئی نے جن اکاؤنٹس کی معلومات فراہم کیں وہ فیصلے میں موجود ہی نہیں۔الیکشن کمیشن کو بتایا کہ کچھ اکاؤنٹس کی معلومات کچھ وجوہات کی بنا پر ضروری نہیں ہے۔

 

قائمقام چیف جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ میں نے لارجر بینچ بنا دیا ہے کل کیس کی سماعت کریں گے۔

 

پی ٹی آئی وکیل کی استدعا تھی کہ شوکاز نوٹس کی حد تک کوئی ایکشن نہ لیا جائے، عدالت نے ریمارکس دیے کہ اسٹے آرڈر بھی لارجر بینچ ہی دیکھے گا۔