عمر شریف علاج کے لیے بذریعہ ایئر ایمبولینس امریکا روانہ

عمر شریف علاج کے لیے بذریعہ ایئر ایمبولینس امریکا روانہ

عارضہ قلب میں مبتلا لیجنڈری کامیڈین عمر شریف تاخیر سے علاج کے لیے بذریعہ ایئر ایمبولینس امریکا روانہ ہوگئے، وہ براستہ جرمنی امریکا میں داخل ہوں گے۔

 

عمر شریف کو علاج کے لیے کم از کم ایک ہفتہ قبل امریکا روانہ ہونا تھا مگر ایئر ایمبولینس کی پاکستان آمد، اداکار کے ویزہ کے اجرا سمیت دیگر مسائل کی وجہ سے ان کی روانگی میں تاخیر ہوئی۔

 

عمر شریف کو امریکا لے جانے کے لیے ایئر ایمبولینس 26 ستمبر کی شب کراچی ایئر پورٹ پہنچ چکی تھی مگر پھر اداکار کی اچانک طبیعت خراب ہونے کی وجہ سے ان کی روانگی مؤخر کردی گئی تھی۔

 

طبیعت خراب ہوجانے پر ایک دن تک عمر شریف کو نگہداشت کے وارڈ (سی سی یو) میں رکھا گیا تھا اور 28 ستمبر کو ان کی صحت میں بہتری کے بعد انہیں روانہ کیا گیا۔

 

عمر شریف کو 28 ستمبر کی دو پہر 12 بجے کے بعد کینیڈین ایئر ایمبولینس کی پرواز آئی ایف اے 1264 کے ذریعے امریکا روانہ کیا گیا۔

 

ایئر ایمبولینس میں مریض کے علاوہ ان کے اہل خانہ اور ایمبولینس عملے کے ارکان سمیت 6 افراد بھی امریکا روانہ ہوئے۔

 

عمر شریف گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے علیل ہیں اور وہ کراچی کے آغا خان ہسپتال میں زیر علاج تھے، انہیں عارضہ قلب کے علاوہ گردوں کے امراض کا بھی سامنا ہے جب کہ انہیں شگر بھی ہے۔

 

 

عمر شریف کے علاج کے لیے سندھ حکومت نے 14 ستمبر کو 4 کروڑ روپے کے فنڈز جاری کیے تھے، جس کے بعد صوبائی حکومت نے انہیں امریکا منتقل کرنے کے لیے ایئر ایمبولینس کے کرائے کی مد میں 20 ستمبر کو 2 کروڑ 84 لاکھ روپے جاری کیے تھے۔

 

اداکار کو امریکا روانگی کے لیے 14 ستمبر کو ویزے بھی مل چکے تھے لیکن ایئر ایمبولینس کا انتظام ہونے اور دیگر کچھ مسائل کی وجہ سے وہ کم از کم 10 دن تاخیر سے علاج کے لیے امریکا روانہ ہوئے۔