پاکستان کو افغان معاملات میں مداخلت سے باز رہنا چاہئے، محسن داوڑ

پاکستان کو افغان معاملات میں مداخلت سے باز رہنا چاہئے، محسن داوڑ

تخت بھائی (نمائندہ شہباز ) نیشنل ڈیموکریٹک موومنٹ کے چیئرمین ایم این اے محسن داوڑ نے کہا ہے کہ ملک اس وقت سیاسی معاشی اور داخلی و خارجی سطح پر شدید بحران کا شکار ہے۔

 

ڈالر اور پٹرولیم سمیت اشیائے خوردنوش کی قیمتیں ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں 'افغانستان میں مداخلت حکومت کو مہنگی پڑے گی جس سے خطے میں نئی جنگ چھڑنے کا خطرہ ہے۔

 

وہ حجرہ ڈاکٹر طارق سردار کلے ساڑوشاہ میں این ڈی ایم کے زیراہتمام کارنر میٹنگ سے خطاب کر رہے تھے 'محسن داوڑ نے کہاکہ موجودہ حکومت سٹیبلشمنٹ کے مرہون منت ہے جبکہ اب آئی ایس آئی سربراہ کی تقرری کے معاملے پر فوج اور موجودہ حکومت کے درمیان شدید اختلاف ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ افغانستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت پاکستان کیلئے خطرناک ثابت ہوگی اور حکومت کو افغانستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت سے باز رہنا چاہیے ورنہ یہ ملک کی سلامتی کیلئے خطرناک ثابت ہوگی۔

 

انہوں نے مزید کہاکہ افغانستان میں حکومت کی تبدیلی سے خطے میں نئی جنگ چھڑسکتی ہے لہٰذا پاکستان ہوش کے ناخن لے 'حکومت کی نااہلی کے باعث ڈالر اور پٹرولیم سمیت اشیائے خوردنوش کی قیمتیں ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہیں جبکہ حکومتی ٹولے کے پاس کوئی حل نہیں 'مہنگائی وغربت کے باعث ملک میں نئے اور خطرناک انقلاب کی طرف اشارہ مل رہے ہیں ۔