سیاحت کیلئے مثبت اقدامات 

سیاحت کیلئے مثبت اقدامات 

سیاحتی سرگرمیوں کے فروغ اور تفریحی مقامات پر غیرقانونی تعمیراتی سرگرمیاں بند کرانے کیلئے صوبائی حکومت کی جانب سے ضروری کارروائی کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔ صوبے کے سیاحتی مقامات تک رابطہ سڑکوں کی تعمیر اور سپشل پرپز ڈیویلپمنٹ اتھارٹیز کے قیام پر پیشرفت کا جائزہ لینے کے لئے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے متعلقہ حکام کو فوری ایکشن لینے اور گلیات ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی طرز پر کالام، کیلاش اور کمراٹ ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کے قیام پر پیشرفت تیز کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ ان علاقوں میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے کی جانے والی کوششوں کو حکومت کی جانب سے مثبت اقدام قرار دیا جا سکتا ہے جس سے نہ صرف سیاحوں کو فائدہ ہو گا بلکہ مقامی لوگ بھی ان سے مستفید ہو سکیں گے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ دنیا بھر کی سیاحت کو اپنی جانب متوجہ کرنے کیلئے ٹھوس بنیادوں پر اقدامات اٹھانے ہوں گے تاکہ کورونا اور لاک ڈاؤن کی صعوبتوں کے بعد مثبت سرگرمیوں کے دور کا آغاز کیا جا سکے۔ چترال کے سیاحتی مقامات دیکھنے کیلئے سالہاسال سیاح آتے رہتے ہیں لیکن مواصلات کا نظام درست نہ ہونے کی وجہ سے انہیں مشکلات کا سامنا رہتا ہے، سیاحتی مقامات تک رابطہ سڑکوں کی تعمیر اور ان کو باقاعدہ استعمال میں لانے کیلئے کوششیں تیز کرنا ہوں گی کیونکہ اس سے نہ صرف ملک میں بلکہ دنیا بھر میں بھی صوبہ خیبر پختونخوا کا مثبت امیج ابھر کر سامنے آئے گا اور ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔ نیز اس سے آمدن کا بھی ایک معقول ذریعہ کھل جائے گا۔ مقامی، ملکی و غیرملکی سیاحوں کے آنے کیلئے سب سے پہلے سڑکوں کی حالت بہتر بنانے کے ساتھ ان کی تعمیر ناگزیر ہے تاکہ مقامی اور غیرمقامی لوگوں کو آنے جانے میں مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ اس کیلئے مالاکنڈ اور ہزارہ ڈویژنز سمیت جنوبی اضلاع کے سیاحتی مقامات تک رابطہ سڑکوں کی تعمیر کے منصوبوں پر پیشرفت کو تیز کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے وزیراعلی نے رابطہ سڑکوں کی تعمیر کے بعض منصوبوں پر عملدرآمد میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے کر انہیں ٹھوس تجاویز تیار کر کے صوبائی کابینہ کے حوالے کرنے کا ٹاسک حوالہ کر دیا تاکہ اس پر غور و خوض کر کے عملی اقدامات کیلئے لائحہ عمل ترتیب دیا جا سکے جس سے آمدورفت میں آسانی سمیت سفری مشکلات کو کم کیا جا سکے۔ تفریحی سرگرمیوں کی اہمیت مسلمہ ہے، اس کو مدنظر رکھتے ہوئے اس سے پہلے بھی کوششیں کی گئیں لیکن اس بار ان میں تیزی لانے سمیت ملکیتی ریسٹ ہاؤسز کا اسسمنٹ سروے کر کے انہیں محکمہ سیاحت کے حوالے کئے جانے کی ہدایات جاری کی گئیں تاکہ اس سے سیاحوں کیلئے بہترین رہائش کا بندوبست کیا جا سکے اور سیر و تفریح کیلئے آئے ہوئے لوگ سیاحت سے محظوظ ہونے کے ساتھ ساتھ رہائش سے متعلق مسائل سے آزاد ہو سکیں۔ صوبے میں پاکستان ٹورازم ڈیویلپمنٹ کارپوریشن کے ریسٹ ہاؤسز کو صوبائی حکومت کی تحویل میں لینے کے لئے درکار فنڈز کا باقی حصہ جاری کرنے کیلئے متعلقہ حکام کو ہدایات جاری کی گئیں تاکہ ان ریسٹ ہاؤسز کو سیاحتی سرگرمیوں کے فروع کے لئے استعمال میں لایا جا سکے ایسے میں سیاحوں کیلئے بہترین انتظامات کرنا بھی ترجیح ہونی چاہئے تاکہ سیاحت کے شعبہ کو فروغ دیا جا سکے۔ سیاحت کسی بھی ملک کا مثبت پہلو دنیا کے سامنے لانے کیلئے واحد ذریعہ مانا جاتا ہے، دنیا بھر کے ممالک اسی جانب توجہ کئے ہوئے ہیں، ہماری حکومت کو بھی اس جانب بھرپور توجہ دینا ہو گی۔ چترال میں سالانہ شندور پولو فیسٹیول کیلئے سب سے بڑا مسئلہ پہاڑی علاقے میں سڑک کی ابتر صورتحال کا ہے جس کی وجہ سے سفر طوالت کا باعث بننے سمیت ذہنی کوفت کا باعث بھی بنتا ہے۔ سڑکوں کی اسی ابتر صورتحال کے باعث صوبہ کے کئی سیر و تفریح کے مقامات تک رسائی میں لوگوں کو کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسے میں حکومت کو تمام تر مشکلات کا ادراک کرتے ہوئے راستے میں حائل رکاوٹیں دور کرنے کیلئے سخت ترین اقدامات کرنے ہوں گے تاکہ دنیا کو صوبہ خیبرپختونخوا کا مثبت رخ دکھایا جا سکے۔ سب سے اہم پہلو ملک خصوصاً خیبر پختونخوا میں امن و امان کا اور سیاسی عدم استحکام کا بھی ہے، اس سلسلے میں بھی حکومت کو اپنی ذمہ داریاں نبھانا ہوں گی بصورت دیگر حکومت کے محولہ بالا تمام اقدامات رائیگاں جائیں گے۔
 

ٹیگس