موبائل کالز پر ٹیکس، ٹیلی کام کمپنیوں کی عالمی تنظیم کاوزیرخزانہ کو خط

موبائل کالز پر ٹیکس، ٹیلی کام کمپنیوں کی عالمی تنظیم کاوزیرخزانہ کو خط

اسلام آباد(این این آئی)موبائل کال پر ٹیکس کے معاملے پر ٹیلی کام کمپنیوں کی عالمی تنظیم (جی ایس ایم اے)نے وزیرخزانہ شوکت ترین کو خط لکھ دیا جس میں موبائل کال آپریٹرز نے ٹیکس کے نفاذ سے متعلق اپنے تحفظات سے آگاہ کیا۔

 

خط کے متن کے مطابق 5 منٹ سے زیادہ کی کال پر 75 پیسے کا ٹیکس ٹیلی کام کے شعبے میں نئی رکاوٹ کا باعث بنے گا جس سے موبائل کمپنیوں کی طویل مدتی بنیادوں پر سرمایہ کاری پر بھی اثر پڑئے گا اور اس شعبے کی ترقی میں منفی اثرات مرتب ہونگے۔

 

واضح رہے کچھ روز قبل وزیر خزانہ شوکت ترین کی جانب سے 5 منٹ سے زائد کالز پر 75 پیسے کا ٹیکس عائد کیا گیا تھا جس کے بعد پاکستان کی بڑی موبائل ٹیلی کام کمپنیاں جیسے جیز، پی ٹی سی ایل اور زونگ کی جانب سے 5 منٹ سے زائد وقت کی کالز پر عائد کردہ ٹیکس کے اعلان پر شدید تحفظات کا اظہار کیا گیا تھا۔

 

موبائل فون کمپنیوں کا کہنا تھا کہ اگر حکومت نے اعلان کردہ نیا ٹیکس لگایا بھی تو یہ لاگو کرنا مشکل ہوگا۔ یہ ٹیکس لگنے کی صورت میں کمپنیوں کی جانب سے صارفین کو مہیا کیے گئے فری منٹس اور بنڈلز ختم کردیئے جائیں گے۔