تحریک انصاف نئے الیکشن چاہتی ہے تو پنجاب اور کے پی اسمبلی تحلیل کردے ۔سردار حسین بابک 

تحریک انصاف نئے الیکشن چاہتی ہے تو پنجاب اور کے پی اسمبلی تحلیل کردے ۔سردار حسین بابک 

پشاور(نیوزرپورٹر)خیبرپختونخوااسمبلی نے اے این پی نے تحریک انصاف والوں پر طالبان کوبھتہ دینے کاالزام لگادیاجس پر حکومتی اراکین آپے سے باہرہوگئے اورایوان بدنظمی کاشکارہوگیا

 

پیر کے روز صوبائی اسمبلی میں نئے انتخابات کے حوالے سے قراردادکی منظوری پراے این پی کے پارلیمانی لیڈرسرداربابک نے کہاکہ نگہت یاسمین اورکزئی اپوزیشن کی نہیں بلکہ حکومت کی طرف دارہے ،سپیکرکی کرسی پرامپائربیٹھاہواہے حکومت امپائرکے بل بوتے پر سیاست کررہی ہے 

 

 سرداربابک نے مزید کہاکہ پی ٹی آئی لیڈرطالبان خان ہے ملک میں موجودہ بحرانوں کی ذمہ دارتحریک انصاف ہے پی ٹی آئی کی قیادت طالبان کے خلاف بات نہیں کرسکتا ہے تو انکے ممبران کہاں سے انکے خلاف بات کرینگے ان میں اتنی جرات نہیں ہے کہ طالبان کے خلاف بات کریں

 

سردار حسین بابک نے ایوان کو بتایا اگر تحریک انصاف نئے الیکشن چاہتی ہے تو پنجاب اور کے پی اسمبلی تحلیل کردے

 

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی وجہ سے سیاسی شائستگی ختم ہوگئی ہے ان کی اخلاقیات دفن ہوچکی ہے یہ لوگ معاشرے کیلئے ناسورہیں ہم سیاست سے اس گندکاخاتمہ کرینگے حکومت میں اتنی ہمت نہیں کہ صوبے کے حقوق کیلئے بات کرے آج پوراصوبہ سیلاب سے متاثرہوچکاہے ،

 

پاک افغان تجارت بند ہے وزیرستان کے لوگ سراپااحتجاج ہیں، پی ٹی آئی کے لوگ طالبان کو بھتہ دے رے ہیں اس دوران حکومتی رکن فضل الہی سمیت پی ٹی آئی کے دیگر اراکین سیخ پا ہوگئے اوراپنی نشستوں پر کھڑے ہوگئے جبکہ ایوان کاماحول بدنظمی کاشکارہواجسکی وجہ سے کان پڑی آوازیں سنائی نہیں دے رہی تھیں