پیپلزپارٹی کی صوبائی قیادت کروڑوں کے فنڈز ڈکار گئی

پیپلزپارٹی کی صوبائی قیادت کروڑوں کے فنڈز ڈکار گئی



پشاور( نیوز رپورٹر) پیپلز پارٹی خیبر پختونخوا کے بعض قائدین نے پارٹی فنڈ سے لانگ مارچ، بلدیاتی انتخابی مہم اور سوشل میڈیا کیلئے دیئے گئے23کروڑ روپے سے زائد کی رقم آپس میں بانٹ لی،

 

 پارٹی کی صوبائی کابینہ کے اہم ترین عہدیدار کا صاحبزادہ پارٹی فنڈ کے5کروڑ روپے لیکر بیرون ملک فرار ہوگیا،

 

ذرائع کے مطابق پارٹی فنڈ سے پیپلز پارٹی کی صوبائی قیادت کو موصول 23کروڑ روپے سے زائد رقم خیبر پختونخوا میں پارٹی کے چند عہدیداروں نے تقسیم کر دیئے۔ 

 

جس پر پارٹی کی مرکزی قیادت نے سخت ناپسندیدگی کا اظہار کیا ہے۔ چند روز قبل پارٹی کی صوبائی کابینہ اجلاس میں پارٹی رہنماؤں نے ایک دوسرے پر فنڈ ہڑپ کرنے کے الزامات عائد کرتے ہوئے ہنگامہ کھڑا کیا، 

 

ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی اسلام آباد لانگ مارچ اورسوشل میڈیا نمائندوں کی خدمات حاصل کرنے کیلئے خیبر پختونخوا میں پارٹی قیادت کو23کروڑ روپے دیئے تھے،مذکورہ رقم میں 18کروڑ روپے پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی عمران خان حکومت کے خلاف اسلام آباد لانگ مارچ کیلئے خیبر پختونخوا سے کارکنوں کو لیجانے کیلئے دی گئی تھی۔ 

 

تاہم اس لانگ مارچ میں خیبر پختونخوا سے پارٹی کارکنوں کی شرکت انتہائی کم رہی۔اور مذکورہ رقم پارٹی کے تین عہدیداروں نے آپس میں تقسیم کی۔خیبر پختونخوا میں پارٹی کے اہم ترین عہدیدار کے صاحبزادے نے آصفہ بھٹو زرداری کواعتماد میں لیتے ہوئے ان سے سوشل میڈیا کے نام پر 5 کروڑ روپے وصول کئے۔ 

 

مذکورہ فنڈ سے صوبے میں پارٹی کیلئے سوشل میڈیا نمائندوں کیلئے لیپ ٹاپ، موبائل خریدنے سمیت کنونشن کا کہا گیا۔ تاہم عہدیدار کے صاحبزادے 5 کروڑ روپے لیکر بیرون ملک چلا گیا۔ جس پر آصفہ بھٹو زرداری نے والد آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کو بھی بتایا،

 

ذرائع کے مطابق اس سے قبل بلدیاتی انتخابات کیلئے پارٹی مہم کیلئے بھی کروڑوں روپے کا فنڈ دیا گیا تھا۔ جس کو پارٹی کے چند عہدیداروں نے غائب کیا۔

 

 سوشل میڈیا کا فنڈ غائب ہونے پر پیپلز پارٹی خیبر پختونخوا کے وٹس ایپ گروپ میں جیالوں نے پارٹی قیادت پر تابڑ توڑ حملے کئے۔ 

 

وٹس ایپ گروپ میں جیالوں نے سوال اٹھایا کہ یہ فنڈ کس نے غائب کئے؟ کس نے کتنا فنڈ لیا؟ جیالوں نے فنڈ غائب ہونے کا معاملہ پارٹی چیئرمین کو پہنچانے کی استدعا بھی کی۔

 

 چند روز قبل صوبائی کابینہ اجلاس میں بعض رہنماں نے مذکورہ فنڈ خرچ کرنے سے متعلق تفصیل مانگی جس پر پارٹی کے بعض قائدین نے برا منایا تو بات تلخی تک پہنچ گئی۔ 

 

پارٹی فنڈ غائب کرنے سے متعلق پیپلز پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری شاذی خان سے بار بار رابطہ کی کوشش کی گئی تاہم ان سے رابطہ نہ ہوسکا۔