جامعہ پشاور کے سپورٹرس ڈائریکٹر کا جرنلزم ڈیپارٹمنٹ پر دھاوا

جامعہ پشاور کے سپورٹرس ڈائریکٹر کا جرنلزم ڈیپارٹمنٹ پر دھاوا

پشاور۔۔۔ پشاور یونیورسٹی کے شعبہ صحافت و ابلاغ کا یونیورسٹی انتظامیہ کو سپورٹس ڈائر یکٹریٹ سائڈ پر شعبہ کے دیواروں کیساتھ پڑا ملبہ اٹھانے سے متعلق خط مہنگا پڑھ گیا۔

 

ڈائر یکٹر سپورٹس  نے ملازمین سمیت شعبہ جرنلزم پر دھاو ا بولتے ہوئے وہاں کے چئیرمین اور ملازمین سے بد تمیزی اور داست رازی کی جس پر شعبہ کے طالب علموں نے ڈائر یکٹریٹ سپورٹس کے خلاف سپورٹس ڈائر یکٹریٹ میں احتجاجی مظاہرہ کیا اور نعرہ بازی کی جبکہ اس موقع پر یونیورسٹی انتظامیہ  اور پولیس کی بھاری نفری بھی موقع پر پہنچ گئی۔

 

تفصیلات کے مطابق شعبہ صحافت کی جانب سے یونیورسٹی انتظامیہ کو  سپورٹس ڈائریکٹریٹ سائڈ سے شعبہ کے دیوار کیساتھ موجود فرنیچر اور دیگر سامان کے ملبہ کی ڈھیر سے متعلق اپنے تحفظات  اگاہ کرنے کیلئے خط لکھا تھا۔

 

خط میں کہا گیا تھا کہ وہاں پڑے ملبہ کی ڈھیر کی وجہ سے شعبہ کے نکاسی اب کا نظام متاثر رہتا ہے اور پانی کے باعث شعبہ کے دیواروں میں زنگ لگنے لگا ۔

 

چئیرمین فیض اللہ جان کے مطابق میں نے انتظامیہ نے متاثرہ جگہ پر کام شروع کیا جس پر تیش میں آکر ڈائر یکٹر سپورٹس بہرہ کرم نے شعبہ صحافت و ابلاغ پر ساتھیوں سمیت دھاوا بول دیا۔ ڈائر یکٹر سپورٹس نے شعبہ صحافت کے چئیرمین  فیض اللہ جان سمیت دیگر سٹاف کیساتھ بد کلامی اور دست رازی کی جس پر شعبہ کے طلبہ نے سپورٹس  ڈائر یکٹریٹ میں جا کر سپورٹس ڈائر یکٹر کے رویہ کے خلاف احتجاجی دھرنا شروع کیا طلبا  کا کہنا تھا کہ ہمارے اساتذہ کیساتھ یہ رویہ قابل مذمت ہے اور مطالبہ کیا کہ سپورٹس ڈائر یکٹر اکر فلفور معافی مانگے بصورت دیگر دھرنا جاری رہے تاہم بعد ازاں پشاور یونیورسٹی ٹیچرز ایسوسی ایشن کے صدر اور دیگر عہدیداران نے اکر معاملہ کو حل کرنے کی کوشش کی تاہم ڈائر یکٹر سپورٹس موقع پر موجود نہیں تھے۔

 

  اس موقع پر شعبہ صحافت کے چئیرمین فیض اللہ جان نے طلبہ اور سٹاف سے کہا کہ پیوٹا کے عہدیداران انتظامیہ کیساتھ مل کر معاملے کو دیکھیں گے اسی لئے طلبا سے گزارش ہے کہ وہ اپنے شعبہ جا کر اپنے زبانی امتحان کی تیاری کریں جس پر طلبہ پر امن طور پر منتشر ہوئے۔

 

یونیورسٹی ذرائع کے مطابق ڈائریکٹر سپورٹس نے یونیورسٹی حدود میں غیر قانونی درخت کاٹ کر یہاں پر جمع کیا ہے جس کی وجہ سے شعبہ صحافت کے بلڈنگ حالیہ بارشوں میں نقصان ہوا،جس کی وجہ سے شعبہ صحافت کے چیئرمیں پروفیسر فیض اللہ جان نے یونیورسٹی انتظامیہ کو باقاعدہ خط لکھ دیا تھا جس پر ڈائیریکٹر سپورٹس بحر کرم نے ساتھیوں سمیت شعبہ صحافت کے چیئرمین پر کے ساتھ دست رازی کی جس پر شعبہ صحافت کے طلباء اور طالبات نے یونیورسٹی سپورٹس ڈائریکٹریٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔

 

مظاہرین نے یونیورسٹی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ بحرے کرم کے خلاف کاروائی کریں اور انکے خلاف انکوائری کمیٹی تشکیل دی جائے جس میں وہ یونیورسٹی کے ان تمام پراپرٹی کی تحقیقات کریں کی انہوں نے کن کن کے ناموں الاٹ کیا ہے