خبردار! جعلی عاملوں سے بچیے

خبردار! جعلی عاملوں سے بچیے

تحریر: ارم رحمان
دور حاضر کا سب سے چمکتا کاروبار جو انتہائی سستے پیمانے پہ شروع کیا جا سکتا ہے۔ صرف ایک چھوٹا سا کمرہ، صاف ہو تو ٹھیک، گندہ بھی چلے گا۔۔ ملگجی روشنی دیے کی یا موم بتی کی۔۔ چند اگربتیاں اور ہاتھوں میں رنگ برنگی انگوٹھیاں اور گلے میں موٹے منکوں کی مالا لیجیے شاندار جاندار عامل منٹوں میں تیار! آج کے دور میں ہر شخص مہنگائی اور کاروبار میں مندی کا رونا رو رہا ہے مگر یہ واحد طبقہ ہے جو اللہ توکل پہ قائم ہیں کیونکہ انھیں پتہ ہے کہ22  کروڑ میں سے آدھی آبادی لٹنے کے لیے بہ آسانی دستیاب ہے اور مزے کی بات۔۔ لٹنے والے غریب ہی نہیں امیر بھی ہیں۔ سادہ لوح ہونا طبعیت اور مزاج ہوتا ہے اس کا تعلق امیری غریبی سے نہیں توہم پرستی اور فاترالعقلی سے ہے اور وہ کسی کی میراث نہیں۔ چند طلسماتی جملے جن کی کشش حسین اور ذہین لوگوں میں بھی نہیں ہوتی وہ اس انداز میں بولے جاتے ہیں کہ آدھے اوسان تو ویسے ہی خطا ہو جاتے ہیں باقی اس عامل کی ہئیت اور شخصیت کو دیکھ کر۔۔ جو جتنا بڑا لٹیرا اسی حساب سے اس کا رہن سہن ہوتا ہے۔ یہ کاروبار عام لوگوں کے بس کا نہیں بلکہ یہ وہ شاطر اور چالاک لوگ ہوتے ہیں جو انسانی نفسیات سے کھیلنا جانتے ہیں۔ اور کچھ عرصے کے مشاہدے اور تجربے سے اتنے ماہر ہو جاتے ہیں کہ بندہ یا بندی دیکھ کر پہچان لیتے ہیں کہ کیا مسئلے ہوں گے۔ ویسے کچھ اپنے ارد گرد کے حالات سے واقف ہوتے ہیں اور مخبر بھی چھوڑے ہوتے ہیں جو قرب و جوار کے لوگوں کے حالات پہ نظر رکھتے ہیں۔ 
کچھ جملے بالکل تیر بہدف نشانے پہ بیٹھتے ہیں؛ شوہر کو قابو کرنا، ساس نند یا بہو کی زبان بندی، اولاد نرینہ، گھر اور اچھا کاروبار یا ملازمت! اور سب سے زیادہ پسندیدہ اور آزمودہ پریشانی جو سب کو ہی لاحق ہے؛ خوبصورت شوہر یا بیوی! لیجیے 
ان سب باتوں میں سے ایک تو لازمی پکا ہوتا ہے، باقی حلیہ دیکھ کر سمجھ جاتے ہیں کہ غریب شخص ہے تو پیسہ ملازمت چاہیے۔ بالکل ملتجیانہ انداز جھکا سر اور دبا لہجہ یعنی  پانچ سات بیٹیوں کا بوجھ لیے باپ یا ماں اچھا رشتہ درکار۔۔ یا بیٹے کی اچھی ملازمت،  روز کے گھسے پٹے جملے اور لوگوں کے تاثرات ازبر کرنا کیا مشکل ہے۔ اب تو نیٹ پہ بھی آئی ڈی نظر آنے لگی ہیں کہ ''آئیے ہم سے مفت استخارہ کروائیے، جادو بندش کا توڑ، جنات کو قابو کرنا اور اپنے ماضی حال مستقبل کا حساب لگائیے
انباکس میں رجوع کیجیے۔'' یقین مانیے مجھ سے رہا نہیں گیا، میں ذاتی تجربے کا ذکر کرنے لگی ہوں۔ نام اور گفتگو عوام کو بتانا غیراخلاقی لگا، بس میں نے ان سے ان باکس میں رابطہ کر لیا اور اپنے تجسس اور پیشہ ورانہ اہلیت کے باعث میں ان موصوف سے سب اگلوانے میں کامیاب ہو گئی۔ وہ موصوف لاہور کے مشہور علاقے میں رہائش پذیر ہیں۔ گدی نشین اور سرکاری نوکری بھی کرتے ہیں اسٹیبلشمینٹ میں۔ اپنی تصاویر مجھے بھیجیں پھر ڈیلیٹ کر دیں۔ اور پھر میری والدہ کا نام میری تاریخ پیدائش اور رہائش پوچھی اور اس کے بعد ان کے ہوشربا انکشافات درج ذیل ہیں۔ ''آپ پر شدید نوعیت کا جادو ہے، آپ کی شادی پہ شدید بندش ہے اور آپ کے اہل خانہ ماں بہن حاسد ہیں اور آپ ہم سے ملیے ہم آپ کے جادو کا توڑ بھی کریں گے اور آپ کی شدید بیماری کا علاج بھی کر دیں گے۔ آپ کی باتیں بہت اچھی لگیں توآپ کا علاج مفت، اپنی تازہ تصویریں بھیجیے۔'' پھر میں نے ایک عورت جس کے9  بچے ہیں، وہ خاتون نانی بن چکی ہیں، ان کے بارے میں پوچھا کہ50  سال کی خاتون30  سال ہو گئے شادی کو ابھی تک اولاد نہیں ہو سکی۔ جواب ملاحظہ کیجیے: ''اس خاتون پہ شدید بندش ہے تاکہ اولاد نہ ہو سکے اور اس کا شوہر بھی درست نہیں وہ تقریباً نامرد ہے۔'' میں بس خاموش ہو کر کنارا کر گئی لیکن اس شخص نے پھر مجھ سے بے تکلف ہونے کی کوشش کی اور بار بار میسج کیے اور پھر مجھے اس سے کہنا پڑا کہ محترم آپ کا ایمان اور عقیدہ درست نہیں۔ نا محرم خواتین سے بے تکلف ہونا گناہ اور حرام ہے، آپ کو بچنا چاہیے اور آپ نے میرے اور اس خاتون کے بارے میں جو کہا وہ غلط تھا، اللہ ہدایت دے، اور بلاک کر دیا۔ اللہ کی قسم کھانا کوئی مسنون عمل نہیں لیکن یقین کیجیے اللہ کی ذات ہی قادر مطلق ہے۔ جادو برحق ہے لیکن اگر اللہ چاہے تب۔ اور اگر اس عمل میں کوئی کامیاب ہو بھی گیا تو یہ اللہ کی ڈھیل ہے اور اس میں کوئی حکمت پوشیدہ ہے۔ اللہ نہ چاہے تو ساری دنیا کتنا زور لگا لے کسی کا کچھ نہیں بگاڑ سکتی۔ میری واقعی قارئین سے گزارش ہے کہ جتنا ہو سکے لوگوں کو ان عاملوں کے پاس جانے سے روکیں، بات پیسوں کی ہوتی تو برداشت کر بھی لیتے بات بہنوں بیٹیوں کی عصمت دری کے ساتھ ساتھ لڑکوں، بچوں بچیوں پہ جن کی حاضری پھر شدید تشدد اور قتل کی بھی ہے، کتنے واقعات روزمرہ سننے دیکھنے میں آتے ہیں مگر عوام اللہ کے سوا ہر کسی کے سامنے جھکنے کو تیار ہے۔ اور چلیے مذہب کو بھی چھوڑئیے دنیا میں ہر انسان کسی کمی، خامی اور دکھ تکلیف میں مبتلا ہے، اگر کوئی بظاہر خوشحال پرسکون نظر آتا ہے تو نجانے اس نے ماضی میں کتنی محنت مشقت کی ہو گی اور مشکلات جھیلی ہوں گی۔ اللہ پہ توکل کیجیے جو مشکلات ہیں ان پہ صبر کیجیے، ایمان سلامت لے کر اللہ کے سامنے جائیے۔ اللہ صابرین کے ساتھ ہے، اللہ بہترین اجر دینے والا ہے۔ کسی تعویذ اور عمل سے کچھ نہیں ہوتا۔ خدارا! شارٹ کٹ ڈھونڈنا کسی الہ دین کے چراغ اور اس کے جن کو قابو کرنے کی تمنا بالکل بے کار ہے۔  اپنی، اپنے اہل خانہ کی عزت اور تقدس کا خیال رکھیے۔ محنت کیجیے اور اللہ پہ چھوڑ دیجیے۔ یاد رکھیے ''وقت سے پہلے اور قسمت سے زیادہ کسی کو نہیں ملتا۔''