درگئی، گرینڈ ہیلتھ الائنس ملاکنڈکے احتجاج کا ڈیڑھ مہینہ مکمل

درگئی، گرینڈ ہیلتھ الائنس ملاکنڈکے احتجاج کا ڈیڑھ مہینہ مکمل

مریض رُل گئے، صرف ایمرجنسی علاج جاری، پرائیویٹ ہسپتالوں کی چاندی

سخاکوٹ (نمائندہ شہباز ) گرینڈ ہیلتھ الائنس درگئی ملاکنڈکے احتجاج کا ڈیڑھ مہینہ مکمل ہوگیا ۔ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ڈاکٹر ہڑتال پر ہیں جبکہ مریضوں کو علاج معالجے میں مشکلات کا سامنا ہے ۔

گذشتہ ڈیڑھ ماہ سے جاری ہڑتال میں ٹی ایچ کیو درگئی میں صرف ایمرجنسی میں علاج کیا جاتا ہے ۔ گرینڈ ہیلتھ الائنس ملاکنڈ درگئی کے صدرڈاکٹر آرشد حسین ، ڈاکٹر جاوید خان اور دیگر ڈاکٹروں نے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال بٹ خیلہ میں ہڑتال کرنے والے ڈاکٹروں اور ہسپتال کے ایم ایس کے درمیان تلخ کلامی اور جھگڑے پر ایم ایس بٹ خیلہ کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ایم ایس ایک ذمہ دار کرسی پر بیٹھا ہے لیکن اس کے باوجود انہوں نے گرینڈ ہیلتھ الائنس کے ڈاکٹروں کیساتھ تلخ کلامی کی ہے اور اسلحہ لہرایا ہے جس کی ہم پُر زورمذمت کرتے ہیں اور واقعے کی غیر جانبدرانہ تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ایسے حالات سے پُر امن احتجاج کو پُر تشدد بنانے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن ہم کسی قسم کے غیر قانونی اقدام میں ملوث نہیں ہو نا چاہتے اور نہ ہم ایسے اقدامات سے مرعوب ہونگے اور اگر حالات بد دستور خراب کرنے کی کوشش کی گئی تو پوری گرینڈ ہیلتھ الائنس متحد ہو کر حالات کا مقابلہ کریگی ۔