پولیو ڈیوٹی سے واپسی پر ٹریفک پولیس اہلکار کی ٹارگٹ کلنگ

پولیو ڈیوٹی سے واپسی پر ٹریفک پولیس اہلکار کی ٹارگٹ کلنگ

پشاور(کرائمز رپورٹر)پشاور کے نو احی علا قے متھرا پیر کلے کے قر یب نا معلو م مو ٹر سا ئیکل سوا ر افرا د نے پو لیو ڈیو ٹی سے واپس جا نے والے ٹر یفک اہلکا ر کو فائرنگ کرکے شہید کر دیا .

 

پو لیس نے نا معلو م افرا د کے خلا ف انسدا د دہشت گر دی ایکٹ کے تحت مقد مہ درج کر کے ملز مو ں کی تلا ش شرو ع کر دی واقعا ت کے مطا بق گز شتہ رو ز ٹریفک کا نسٹیبل محب اللہ ولد رحمن گل سکنہ چغر مٹی کو کہ ایک رو ز قبل ٹر یفک پو لیس کی جانب سے پو لیو میں ڈیو ٹی سر انجا م دینے کے لئے متھرا پو لیس کے حوا لے کیا تھا.

 

پو لیس تر جما ن کے مطا بق ٹر یفک کا نسٹیبل نے تھا نہ متھرا میں پو لیو ٹیم کیسا تھ ڈیو ٹی سر انجا م دینے کے بعدواپس اپنی مو ٹر سا ئیکل پر گا ئو ں چغر مٹی جا رہا تھا کہ را ستے میں پیر کلے کے قر یب مو ٹر سا ئیکل پر سو ار 2 افرا د نے فا ئر نگ کا نشا نہ بنا یا جس کے نتیجے میں وہ شد ید زخمی ہو گئے جس کو مقا می افرا د ہسپتا ل لے جا رہے تھے کہ راستے میں شہا د ت نو ش کر گئے .

 

پو لیس تر جما ن نے بتا یا کہ ٹر یفک اہلکا ر کو ٹا ر گٹ کر کے قتل کیا گیا ہے جس کا مقد مہ تھا نہ سی ٹی ڈی میں درج کر دیا گیا یا د رہے کہ پو لیو کی پا نچ رو زہ پو لیو مہم 21 اکتو بر سے شرو ع ہوئی ہے جس کے با عث پشاور میں ایک با ر پو لیو ٹیم کو ٹا رگٹ کا نشا نہ بنا یا گیا تر جما ن پو لیو خیبر پختو نخوا کا کہنا تھا کہ متھرا اور اسکے ارد گر د علا قوں میں پو لیو مہم بد ستو ر جا ری رہے گی ۔

 

دوسری جانب پشاور کے علاقہ متھرا میں ہینڈ گرینیڈ پھٹنے سے 2بھائی شدید زخمی ہوگئے جنہیں طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں ایک مجروح کی جیب میں دوسرے دستی بم کی موجودگی سے ایمرجنسی وارڈ میں بھگدڑ مچ گئی تاہم بعد ازاں پولیس اور بی ڈی نے اسے ناکارہ بنادیا۔

 

پولیس کے مطابق متھرا برج ناصر خان مین 2نوجوان بھائی رحیم اور یاسین پسران اختر گل کو کھیتوں میں کام کے دوران 2دستی بم ملے جو دونوں بھائیوں نے اٹھالئے، اس دوران رحیم نے ہینڈ گرینیڈ جیب میں ڈال دیا جبکہ یاسین کے ساتھ موجود دستی بم زوردار دھماکے سے پھٹ گیا جس کے نتیجہ میں دونوں شدید زخمی ہوگئے جنہیں مقامی افراد نے طبی امداد کیلئے خیبر ٹیچنگ ہسپتال منتقل کردیا، علاج کی فراہمی کے دوران معلوم ہوا کہ مجروح رحیم کی جیب میں ایک دستی بم موجود ہے جس سے ڈاکٹرز اور دیگر عملہ ایمرجنسی وارڈ سے نکل گیا۔

 

بعد ازاں پولیس اور بی ڈی یو ٹیم نے اطلاع ملنے پر وارڈ کو گھیرے میں لے لیا اور ہینڈ گرینیڈ کو برآمد کرکے ناکارہ بنا دیا۔پولیس کے مطابق واقعے کا مقدمہ درج کرکے مختلف زاویوں سے تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے۔