بد ترین  لوڈ شیڈنگ سے معیشت کا پہیہ رک چکا ہے، مشتاق خان

بد ترین لوڈ شیڈنگ سے معیشت کا پہیہ رک چکا ہے، مشتاق خان

پشاور(سٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی کے صوبائی امیر و سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا میں 6ہزار 138 میگاواٹ بجلی پیدا ہوتی ہے صوبہ ملک میں سب سے سستی بجلی پیدا کرتا ہے اسکے باوجود صوبے میں اس وقت غذاب کی حد تک لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جبکہ بد ترین لوڈ شیڈنگ کے باعث معیشت کا پہیہ رکا ہوا ہے اور نا اہل حکمرانوں کی وجہ سے عوام تکلیف سے دو چار ہیں۔

 

ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان نے پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب میں کیا ۔انکے ہمراہ پارٹی کے دیگر عہدیداران بھی موجود تھے ۔صوبائی امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ اے جی این قاضی فارمولہ کے تحت وفاق 638 ارب روپے خالص بجلی کے منافع کا مقروض ہے،وفاق نے اب تک صرف 30 ارب روپے جاری کئے ہیںجبکہ وفاقی حکومت خیبرپختونخوا کے ساتھ دشمنی کر رہی ہے صوبے میں بد ترین لوڈشیڈنگ کے باعث ہسپتالوں میں مریضوں کو شدید تکلیف کا سامنا ہے ۔

 

صوبائی امیر جماعت اسلامی سنیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ تحریک انصاف حکومت پختونوں سے انتقام لے رہی  ہے وفاق سے ہر صورت میں اپنا حق لیں گے ہمیں اپنے کوٹے کی بجلی نہیں دی جا رہی لوڈشیڈنگ اور وفاقی حکومت کی چوری اور ڈھاکا ڈالنے کے خلاف مظاہروں کا اعلان کرتے ہیں جبکہ اتوار سے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف پورے صوبے میں مظاہرے ہونگے ۔

 

سنیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ جانی خیل قوم کے ساتھ امن کیلئے معاہدہ کیا گیا تھاتاہم پی ٹی آئی نے جانی خیل قوم کے ساتھ سب سے بڑا فراڈ کیا ہے پی ٹی آئی کی حکومت نے صوبے کے حقوق کا سودا کیا ہے۔