خیبر ٹیچنگ ہسپتال سے کورونا وائرس کا مشتبہ مریض فرار ،گھر میں قرنطین

پشاور(کرائمز رپورٹر) پشاور کے خیبر ٹیچنگ ہسپتال سے کورونا وائرس کا مشتبہ مریض فرار ہوکر گھر پہنچ گیا، پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے گھر قرنطینہ قرار دے کر آنے جانے پر پابندی عائد کردی۔

ہسپتال کے سکیورٹی آفیسر سید مبشر حسین کی جانب سے گزشتہ روز ڈی ایس پی یونیورسٹی ٹائون کو مراسلہ بھیجا گیا کہ گزشتہ دنوں کورونا وائرس کے شبہ میں اشرف خان ولد مسافر ساکن دلہ زاک روڈ ثمر باغ نامی نوجوان کو ہسپتال کے آئیسولیشن وارڈ میں داخل کرایا گیا تھا جس کے خون کے نمونے لے کر اسلام آباد ارسال کردیئے گئے تاہم رزلٹ موصول ہونے سے قبل ہی 19 مارچ کو وہ ہسپتال سے فرار ہوگیا۔

درخواست میں بتایا گیا ہے کہ مریض روم نمبر 21میں داخل تھا اور اگر خدانخواستہ اس کی میڈیکل رپورٹ میں وائرس کی موجودگی کی تصدیق ہوگئی تو اس کی ہسپتال سے فرارگی کافی نقصان دہ ثابت ہوسکتی ہے لہٰذا مریض کا فوری سراغ لگانے اور ہسپتال منتقل کرنے کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں۔

پولیس کے مطابق تفتیش کے دوران معلوم ہوا کہ مشتبہ مریض گھر میں موجود ہے جس پر اس کی رہائشگاہ کو قرنطینہ قرار دے کر اس کے باہر نکلنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے جبکہ ٹیسٹ رپورٹ موصول ہونے کے بعد انتظامیہ کی ہدایات کی روشنی میں مزید کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں

صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن کا بارہواں دن ،شہری محصور، زندگی معطل ہو گئی

پشاور(سٹاف رپورٹر)پشاور سمیت صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن کا بارھواں دن بھی جا ری رہا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔