کیپٹن (ر) صفدرکی گرفتاری پی ڈی ایم پر حملہ قرار، چند گھنٹے بعد رہا کر دیا گیا

کراچی (این این آئی) پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ کیپٹن (ر)صفدر کی گرفتاری اپوزیشن اتحاد کو تقسیم کرنے کی ساش ہے ،یہ صرف مریم پر نہیں بلکہ پوری پی ڈی ایم پر حملہ ہے، یہ جو نامعلوم افراد ہیں یہ سب کو معلوم ہیں اور خلائی مخلوق سے اگر آپ زمینی مخلوق بن گئے ہیں تو کیا لوگوں کو سمجھ نہیں آئے گی،مریم نواز یہاں آئی ہیں تو پیپلز پارٹی میزبان ہے، جس کی مدعیت میں ایف آئی آر کٹی، وہ مدعی کون ہے ہم عوام کو بتائیں گے،ہم بچے نہیں ہیں سب سمجھتے ہیں کہ یہ کھیل کیوں کھیلا گیا،حکومت کے دن گنے جاچکے ہیں، بلاول بھٹو، آصف زرداری کو اس واقعے سے دکھ پہنچا ہے،وزیراعلی سندھ کو اس معاملے سے بے خبر رکھا گیا جس کے بعد واضح ہوگیا ہے حکومت کس کی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن ،مسلم لیگ (ن)کی نائب صدر مریم نواز شریف اور سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے پیر کو مقامی ہوٹل میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے صدر مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ پی ڈی ایم کے رہنما کیپٹن صفدر کو ہوٹل سے اس وقت گرفتار کیا گیا جب ان کی اہلیہ بھی وہاں موجود تھی۔انہوں نے کہا کہ رینجرز نے ان کے کمرے پر دھاوا بولا اور دروازہ توڑا، کیا ہمارے معاشرے میں ایک خاتون کی یہ عزت ہے۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ حکومت سندھ نے اس حوالے سے اپنا موقف دیا ہے کہ وزیراعلی کو اس معاملے سے بے خبر رکھا گیا جس کے بعد واضح ہوگیا ہے کہ حکومت کس کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس سے لگتا ہے کہ موجودہ حکومت کے جانے کا وقت آگیا ہے کیونکہ آخری وقت میں اسی طرح کے حربے آزمائے جاتے ہیں۔ مریم نواز نے کہا کہ کہ صبح 6 بجے کے قریب ہم سو رہے تھے کہ ہمارے کمرے کا دروازہ زور زور سے کھٹکھٹایا گیا اور جب صفدر نے دروازہ کھولا تو باہر پولیس کھڑی تھی اور انہوں نے کہا کہ گرفتار کرنے آئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صفدر نے کہا کہ میں واپس آتا ہوں اور یہ کہہ کر اندر آئے تو پولیس اہلکار دروازہ توڑ کر اندر داخل ہوئے اور انہیں گرفتار کرکے لے گئے۔مریم نواز نے کہا کہ بلاول بھٹو نے فون کرکے کہا کہ ہمیں دکھ ہے کہ آپ ہماری مہمان تھی اور اس طرح کا واقعہ پیش آیا اور اسی طرح وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے بھی فون کرکے کہا کہ ہم شرمندہ ہیں کہ اس طرح کا واقعہ ہوا۔

انہوں نے کہا کہ یہ جو نامعلوم افراد ہیں یہ سب کو معلوم ہے اور خلائی مخلوق سے اگر آپ زمینی مخلوق بن گئے ہیں تو کیا لوگوں کو سمجھ نہیں آئے گی۔مریم نواز نے کہا کہ وقاص احمد کی مدعیت میں ایف آئی آر درج کرایا گیا ہے ان کے خلاف قتل کے مقدمات ہیں، کیا آپ کو ایسے لوگ ملتے ہیں ظاہر ہے انہیں اٹھانا نہیں پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ میرے قریبی لوگوں کے ذریعے مجھے بلیک میل کرنے سے بہتر ہے کہ یہاں موجود ہوں کہ اگر ہمت ہے تو آئیں اور مجھے گرفتار کریں۔

ادھر مزار قائد کی بے حرمتی کیس میں سندھ پولیس نے مسلم لیگ(ن)کی نائب صدر مریم نواز کے شوہر اور سابق رکن قومی اسمبلی کیپٹن(ریٹائرڈ)محمد صفدر کو گرفتار کرلیاہے۔

مریم نواز نے ٹوئٹ کرتے ہوئے بتایا کہ کراچی میں پولیس نے ہوٹل میں ہمارے کمرے کا دروازہ توڑ کر کیپٹن (ر)صفدر کو گرفتار کرلیا۔

یہ بھی پڑھیں

جے یو آئی کا کورونا فنڈ میں تحریک انصاف کی کرپشن منظر عام پر لانے کا دعویٰ

آڈٹ رپورٹ کے مطابق من پسند افراد کو ٹھیکے دیئے گئے، 6 کروڑ 55 لاکھ …