چین، 4 پاکستانی طلبہ میں کروناوائرس کی تصدیق

اسلام آباد(ویب ڈسک)وزیر اعظم کے معاون خصوصی صحت ڈاکٹر ظفرمرزا نے کہا ہے کہ چین کے ووہان شہر میں چار پاکستانی طلبہ میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوچکی، ان طلبہ کے خاندانوں کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ مریضوں کا علاج حکومت پر ہے۔

ڈاکٹر ظفرمرزا نے پریس کانفرنس کے دوران کہا ہے کہ میرا وزارت خارجہ اور چین میں پاکستانی سفارتخانے سے رابطہ ہے، چین میں تمام پاکستانی طلبہ سے پاکستانی سفارتخانے کا عملہ مستقل رابطے میں ہے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا ہے کہ پاکستانی طلبہ جن کو چین میں کورونا وائرس ہوا ہے ان کی صحت بہتر ہورہی ہے، کانفیڈینشل ہونے کے ناطے ہم ان 4 طلبہ کے نام نہیں بتا رہے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کرونا وائرس میں چھاتی کا انفیکشن نمونیا کی صورت اختیار کرلیتا ہے، چین نے کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے اقدامات کیے ہیں، ان کے اقدامات کو پوری دنیا میں سراہا جا رہا ہے، چین سے کوئی بھی شخص بیرون ملک جانا چاہیے تو اسے 14 دن انڈر آبزرویشن رکھا جاتا ہے، چینی شہر وہان سے کوئی بھی باہر نہیں جاسکتا۔

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا ڈبلیو ایچ او نے مخلتف اجلاسوں میں کرونا وائرس سے متعلق صورتحال کا جائزہ لیا، انہوں نے کرونا وائرس سے متعلق مختلف تدابیر جاری کی، اگر کسی شخص پر کرونا وائرس کا شبہ ہے تو اسے انڈر آبزرویشن رکھا جائے۔

ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کا ایک مریض بھی کنفرم نہیں، سر درد، بخار، کھانسی، سانس کی تکالیف علامات ہیں، 100 میں سے 97 مریض بچ جاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

صدر مملکت سے اسلامی نظریاتی کونسل کے وفد کی ملاقات ، کورونا صورتحال پر گفتگو

اسلام آباد (این این آئی)صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی سے اسلامی نظریاتی کونسل کے وفد نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔