پی ڈی ایم کا بٹ خیلہ جلسہ، تحریک انصاف نے کرپشن کا بازار گرم کر رکھا ہے، فضل الرحمان

تبدیلی کا نعرہ لگانے والے سارے دھوکے باز ہیں جنہیں حکومت چلانی نہیں آتی، وزیراعظم نے سانحہ مچھ لواحقین کو بلیک میلر قرار دیدیا، یہ کیسا انصاف ہے، بلاول، ہمیں جمہوریت اور ووٹ کی قدر کرنی چاہیے، سیاسی جماعتیں پوری قوم کے لیے جدوجہد کررہی ہیں، پاکستان عالمی سطح پر تنہا ہوگیا ہے، محمو د خان اچکزئی

بٹ خیلہ (نمائندہ شہباز+ ایجنسیاں) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ اور پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ ’’پی ڈی ایم‘‘ کے صدر مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم 19 جنوری کو الیکشن کمیشن آف پاکستان کے سامنے مظاہرہ جبکہ 21 جنوری کو کراچی میں ملین مارچ کریگی۔ ملاکنڈ کے علاقے بٹ خیلہ میں پی ڈی ایم کے جلسہ سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ صوبوں کے عوام اور ان کے حقوق کے ساتھ کھڑے ہیں۔

انہوں نے تحریک انصاف کی حکومت کو مخاطب کرکے کہا کہ اس حکومت نے کرپشن کے دروازے کھول رکھے ہیں اور قومی احتساب بیورو (نیب) کو یہ نظر نہیں آتا۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تمھارا اقتدار اسرائیل، بھارت، قادیانیوں کے پیسوں سے ہے اور پھر کہتے ہو کہ تم محب وطن ہو۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم، اسلام آباد میں 19 جنوری کو الیکشن کمیشن کے دفتر کے سامنے مظاہرہ کرے گی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ21 جنوری کو کراچی میں اسرائیل نامنظور کے لیے ملین مارچ انعقاد کریں گے۔

پی ڈی ایم سربراہ نے کہا کہ اس سے پہلے عوام تمہارے اقتدار کی کشتی غرق کردے، چند دن باقی ہے خود استعفی دے کر چلے جائو۔ ان کا کہنا تھا کہ آئین اور صوبوں کے حقوق کے خلاف سازشیں ہورہی ہیں جبکہ معیشت پشاور میں بی آر ٹی کی طرح تباہ ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج اسلام آباد میں بھی امن نہیں رہا اور اس حکومت میں لاقانونیت اتنی بڑھ گئی کہ دن دہاڑے نوجوان لڑکے پر گولیاں برسا دی گئیں۔

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ ہم خون کی سیاست نہیں مانتے لیکن ہم، آپ کو آپ کی ذمہ داری کا احساس دلانا چاہتے ہیں۔ پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان نے 21جنوری کو کراچی میں اسرائیل نامنظور ملین مارچ کا اعلان کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملین مارچ میں لاکھوں افراد شرکت کریں گے جس میں عوام اسرائیل سے اپنی نفرت کا اظہار کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان فوری مستعفی ہو جائیں ورنہ عوامی انقلاب انہیں بہا لے جائے گا۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ تبدیلی کا نعرہ لگانے والے سارے دھوکے باز ہیں جنہیں حکومت چلانی نہیں آتی ،ملاکنڈ کے ہر شہری کا مطالبہ ہے سلیکٹڈ چلا جائے، وزیراعظم عمران خان نے سانحہ مچھ کے لواحقین کوبلیک میلر قرار دے دیا، یہ کس قسم کا انصاف ہے، عوام ناجائز حکمرانوں کو آج سے نہیں 60 سال سے بھگت رہے ہیں، کٹھ پتلی، سلیکٹڈ راج کا خاتمہ اور جمہوریت بحال کریں گے۔

بٹ خیلہ میں حکومت مخالف سیاسی جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے جلسے سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ کے عوام نے پاکستان کو اپنا فیصلہ سنا دیا۔ عوام ناجائز حکمرانوں کو آج سے نہیں 60 سال سے بھگت رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ہم نے جوبھی وعدہ کیا اسے پورا بھی کیا ہے، ذوالفقار علی بھٹو نے ایف سی آر کے خاتمے کا وعدہ کیا تھا اور پورا کرکے دکھایا۔

انہوں نے کہاکہ عوام نے پیپلز پارپی کے ساتھ ملکر جدوجہد کی ہے، آمروں کا مقابلہ کیا ہے اور اپنے حقوق کو آمروں سے چھینا ہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ تبدیلی کا نعرہ لگانے والے سارے دھوکے باز ہیں جنہیں حکومت چلانی نہیں آتی لیکن تبدیلی کا نعرہ لگا کر عوام کو دھوکا دیا۔

انہوں نے ملاکنڈ کے عوام کو گواہ بنا کر کہا کہ کٹھ پتلی اور سلیکٹڈ راج کا خاتمہ کریں گے، کٹھ پتلی راج کا خاتمہ کرکے اور حقیقی جمہوریت بحال کریں گے، عوامی راج قائم کر ینگے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ ملا کنڈ کے عوام محبت وطن اور بہادر لوگ ہیں ،ہمیں یاد ہے، مالا کنڈ کے لوگوں نے دہشتگردی کا مقابلہ کیا ہے اس کو پوری دنیا نے دیکھا ہے، ملاکنڈ کے عوام نے دہشتگردوں کو ہماری سر زمین سے بھگا دیا، انہوں نے کہا کہ اس وقت ایک عمران خان تب بھی تھا جو دہشت گردوں کا نام لینے سے گھبراتا تھا اور وہ دہشت گردوں کا وکیل بنا ہوا تھا اور دہشتگردوں کا یہاں دفتر کھولنا چاہتا تھا۔

انہوں نے کہاکہ آج تک کسی شہید کو انصاف نہیں دلا سکے، دہشت گردوں کو قانون کے دائرے میں نہیں لاسکے، ہم اپنے شہیدیوں اور ان کے لواحقین کے آگے شرمندہ ہیں کہ یہ کس قسم کا انصاف ہے جس کی تکرار وزیر اعظم کرتا رہتا ہے۔ بلورخاندان اور میاں افتخار حسین کے خاندان کو انصاف نہیں دلاسکا، کسان بھائیوں کو انصاف نہیں دلا سکا۔ اپوزیشن اتحاد (پی ڈی ایم) کے مرکزی رہنما محمود خان اچکزئی نے کہا کہ ہماری تحریک کا مقصد وزیراعظم عمران خان کو ہٹانا نہیں بلکہ ووٹ کو عزت دینا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں پوری قوم کے لیے جدوجہد کررہی ہیں، پاکستان عالمی سطح پر تنہا ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ایمانداری سے بات کرنے والوں کے خلاف کیسز بنتے ہیں، ہمیں جمہوریت اور ووٹ کی قدر کرنی چاہیے۔ اپوزیشن اتحاد کے مرکزی رہنما نے کہا کہ قومی احتساب بیورو (نیب) کو سیاسی انجینئرنگ کے لیے استعمال کیا جارہا ہے، پی ڈی ایم کا مقصد عمران خان کو ہٹانا نہیں ہم ووٹ کی عزت چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

حکمرانوں نے آئی ایم ایف کے احکامات پر سرتسلیم خم کرلیا ہے‘سراج الحق

بجلی، گیس اور پٹرول نایاب چیزیںبن گئیں، بجلی گھروں میں آتی نہیں قیمتوں میں اضافہ …