کابل، تعلیمی مرکز پر خودکش حملہ، 15 افراد جاں بحق، 30 سے زائد زخمی

کابل(این این آئی) افغان دارالحکومت کابل زوردار دھماکہ سے گونج اٹھا جس کے نتیجے میں کم از کم 15 افغان شہری جاں بحق اور30 سے زائد دیگر زخمی ہوگئے۔

یہ دھماکہ ہفتہ کے روز بعداز سہ پہر مقامی وقت کے مطابق تقریباً ساڑھے چاربجے شہر کے مصروف ترین دشت برچی کے علاقے خشک پل میں واقع کوثر دانش نامی تعلیمی تربیتی مرکز کے باہر ہوا جس میں افغان وزارت داخلہ کے ترجمان طارق آریان کے حوالے سے موصولہ ابتدائی اطلاعات کے مطابق کم از کم 10 افغان شہری جاں بحق اور20 دیگر زخمی ہوگئے تاہم دیگرباخبر ذرائع نے محکمہ صحت کے مقامی حکام کے حوالے سے تصدیق کی ہے کہ دھماکہ میں بچوں سمیت 15 شہری جاں بحق اور 30 سے زائد دیگر زخمی ہوگئے جنہیں ہسپتال منتقل کیا گیا ہے جبکہ ہلاکتوں میں مزیداضافہ کا خدشہ ظاہرکیا ہے۔

عینی شاہدین کے حوالے سے ملنے والی معلومات کے مطابق دھماکہ ایک ٹریننگ سنٹر کے قریب ہوا جہاں ایک خودکش بمبار نے گیٹ پر موجود سیکیورٹی اہلکاروں کی مزاحمت کے بعد خودکو دھماکہ سے اْڑادیا۔ دھماکہ کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقہ کا گھیراؤ کرلیا۔ فوری طورپر دھمالکی کی نوعیت کے بارے پتہ نہیں چل سکا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق طالبان نے دھماکہ کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ادھر ہفتہ کی صبح صوبہ غزنی میں دو بم دھماکوں میں 8 شہریوں سمیت 9 افراد لقمہ اجل بن گئے۔

صوبائی گورنرکے ترجمان وحیداللہ جمعہ زادہ کے مطابق شہر کے علاقے روضہ میں ہوا جہاں ایک گاڑی سڑک کنارے نصب بارودی موادسے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں چار خواتین سمیت 8 شہری جاں بحق ہوگئے۔

ترجمان کے مطابق دوسرا دھماکہ اْس وقت ہوا جب پولیس دھماکہ کی اطلاع ملنے پر جائے وقوعہ جارہی تھی کہ سڑک کنارے نصب دوسرے بم کے ساتھ پولیس کی گاڑی ٹکراگئی جس کے باعث پولیس اہلکار جاں بحق ہوگیا۔

دریں اثناء جنوب مغربی صوبہ نمروز میں طالبان نے حملہ کرکے زیرتعمیر کمال خان ہائیڈرواینڈ ایریگیشن ڈیم کی حفاظت پر مامور6 سیکیورٹی اہلکاروں کو موت کے گھاٹ اْتار دیا۔

یہ بھی پڑھیں

33کروڑ50لاکھ انسانوں کو اگلے برس ہنگامی امداد کی ضرورت ہوگی

نیو یارک (آن لائن) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی عالمی وبا …