افغان طالبان کا رہائی پانے والے قیدیوں کے خلاف آپریشن کا الزام

طالبان کے خلاف افغان انٹیلی جنس خفیہ آپریشن کر رہی ہے، خمیازہ حکومت کو بھگتنا ہو گا،سہیل شاہین

کابل (آن لائن )افغان طالبان کے دوحہ میں قائم سفارتی دفتر کی جانب سے الزام عائد کیا گیا ہے کہ کابل حکومت کی جانب سے رہا کیے جانے والے افراد کو دوبارہ حراست میں لیا جا رہا ہے۔ طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے اتوار کو اپنے بیان میں کہا کہ رہائی پانے والے طالبان کے خلاف افغان انٹیلی جنس خفیہ آپریشن کر رہی ہے۔

سہیل شاہین نے دھمکی دی ہے کہ اس کا خمیازہ کابل حکومت کو بھگتنا پڑے گا۔ واضح رہے کہ امریکا کے ساتھ طے پانے والے معاہدے کے تحت کابل حکومت اب تک چار ہزار طالبان قیدیوں کو رہا کر چکی ہے جبکہ طالبان نے بھی سات سو افراد کو رہا کیا ہے۔ ڈیل کے تحت طالبان کے پانچ ہزار قیدیوں کو رہا کیا جانا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

طالبان قیدیوں کی رہائی بارے افغان لویہ جرگہ مذاکرات سے قبل فریقین جنگ بندی یقینی بنائیں

کابل(نمائندہ خصوصی )افغانستان میں طالبان قیدیوں کی رہائی کیلئے حمایت حاصل کرنے کیلئے تین روزہ …

%d bloggers like this: