رواں سال افغان شہریوں کی ہلاکتوں میں 13 فیصد کمی ہوئی، اقوام متحدہ

نیو یارک(آن لائن ) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ افغانستان میںرواں سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران شہری ہلاکتوں میں 13 فی صد کمی واقع ہوئی ہے غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق 2012ء کے بعد یہ شہری ہلاکتوں کی سب سے کم تعداد ہے اور اس کی بڑی وجہ امریکہ کے زیر قیادت اتحادی افواج اور داعش کی کارروائیوں میں کمی کو قرار دیا جا رہا ہے۔

افغانستان میں اقوام متحدہ کے امدادی مشن (یو این اے ایم اے) نے چھ ماہ کی رپورٹ جاری کی ہے جس کے مطابق اس عرصے میں تقریباً 3500 شہری ہلاک ہوئے، ان میں 1282 شہری طالبان اور سرکاری سیکورٹی فورسز کی جھڑپوں کی زد میں آئے۔

مجموعی طور پر پچھلے سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں یہ کمی 13 فی صد ہے۔ افغانستان میں اقوام متحدہ کے امدادی مشن نے اس کمی کو خوش آئند قرار دیا اور کہا ہے کہ اس کی بڑی وجہ بین الاقوامی فورسز اور داعش کی افغانی شاخ کی کارروائیوں میں کمی قرار دی جا سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

طالبان قیدیوں کی رہائی بارے افغان لویہ جرگہ مذاکرات سے قبل فریقین جنگ بندی یقینی بنائیں

کابل(نمائندہ خصوصی )افغانستان میں طالبان قیدیوں کی رہائی کیلئے حمایت حاصل کرنے کیلئے تین روزہ …

%d bloggers like this: