مشکوک لائنس والے 262پائلٹس کو شو کاز نوٹس جاری کیا جائے،شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد (آن لائن) سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے مطالبہ کیا ہے کہ مشکوک لائنس والے 262پائلٹ کو شو کاز نوٹس جاری کیا جائے ، اور بورڈ کے سامنے جواب دینے کا موقع دیں ،سی اے اے کا لائنس جعلی نہیں ہوتا ،جس آدمی نے بھی تحریری امتحان میں چیٹنگ کی ہے اس کا لائسنس کینسل ہو نا چاہیے ،انصاف کا تقاضا تھا پہلے کارروائی کرتے پھر ہٹاتے۔

Advertisements

ہفتہ کو پریس کانفرنس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ پائلٹ کے 860میں سے 262کے لائنس مشکوک ہیں سی اے اے امتحان کے بعد لائسنس جاری کرتا ہے اور سی اے اے کا لائسنس جعلی نہیں ہوتا۔

انہوں نے کہاکہ ابھی تک سی سی اے کا بیان سامنے نہیں ایا۔ سابق وزیر اعظم نے کہاکہ انصاف کے تقاضے کہتے ہیں اگر الزام لگانا ہے تو ملزم کو بتائیں کہ الزام کیا ہے ،ہم نے سزا دے دی لسٹیں چھپ گئیںپچاس سے زائد پائلٹ رابطے میں ہیں اور کہتے ہیں ہمارا کیا بنے گا ،پاکستان کی ساکھ خطرے میں ہیں کپتان بننے سے پہلے امتحان ضروری ہوتا ہے ،ان دوسوباسٹھ کو نوٹس جاری کرنا چاہیے ،ان پائلٹس کو موقع دیں وہ بورڈ کے سامنے جواب دیں۔

انہوں نے کہاکہ جس آدمی نے تحریری امتحان میں چیٹنگ کی ہے اس کے کا لائسنس کینسل ہونا چاہیے۔سابق وزیر اعظم نے کہاکہ جن پائلٹس کی لسٹ دی گئی ہے، ان میں چند شہید ہو گئے ، کچھ ریٹائرڈ ہو گئے ،کچھ کا ڈیٹا کلیئر نہیں اور کچھ کورٹ گئے ہوئے ہیں،اگر کسی پائلٹس نے کسی امتحان میں نقل کی ہے انکو فارغ کرنا چاہئے۔ انہوںنے کہاکہ یہ اختیار سول ایوی ایشن کے پاس ہے،انصاف کا تقاضا تھا پہلے کارروائی کرتے پھر ہٹاتے لیکن حکومت نے کارروائی سے پہلے پائلٹس کو ہٹایا اور دنیا میں بدنامی ہوئی۔

انہوں نے کہاکہ حکومت فوری طور پر سی اے اے کے رول کے تحت کارروائی کرے۔ انہوںنے کہاکہ سفارش والے اور جس نے سفارش کی ان کے خلاف بھی کاروائی ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ سول ایویشن کی کارکردگی کو مشکوک نظر سے دیکھا جا رہا ہے۔

سابق وزیر اعظم نے کہاکہ پاکستان کے ایوی ایشن سیکٹر میں صرف پائلٹس نہیں بلکہ ہزاروں انجینئرز اور دوسرے لوگ اس انڈسٹری سے وابستہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

مشترکہ مفادات کونسل نے متبادل انرجی پالیسی کی منظوری دے دی

اسلام آباد (این این آئی) وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت مشترکہ مفادات کونسل (سی …

%d bloggers like this: