سینٹ قائمہ کمیٹی اجلاس ،وزارت خزانہ حکام کی عدم شرکت پر برہمی

ٹیکس لاز ترمیمی بل 2020 بل کو فی الفور واپس لیا جائے،قائمہ کمیٹی کی ہدایت

ٍاسلام آباد( آن لائن)ایوان بالاء کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر فاروق حامدنائیک کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہائوس میں منعقد ہوا ۔قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں 19جون2020 کو سینیٹ ہائوس سے بھیجے گئے ٹیکس لاز ترمیمی بل 2020 اور19 جون2020 کو ہی سینیٹ ہاؤس سے بھیجے گئے کورڈ 19 (سمگلنگ سے تحفظ )بل2020 کے معاملے کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا ۔

ٹیکس لاز ترمیمی بل 2020کے بل کے حوالے سے چیئرمین و اراکین کمیٹی نے کہا کہ یہ بل فنانس بل2020 کا حصہ ہے جس کا کمیٹی نے تفصیلی جائزہ لے لیا ہے اب اس کا مزید جائزہ لینے کی ضرورت نہیں ہے ۔ کورڈ 19 (سمگلنگ سے تحفظ )بل2020کے حوالے سے چیئرمین کمیٹی سینیٹر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ اس بل کے اغراض و مقاصد میں کہا گیا ہے کہ بل منی بل نہیں ہے لہذا کمیٹی اس بل پر بحث نہیں کر سکتی

قائمہ کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ یہ بل واپس لیا جائے اور حکومت کی طرف سے اور دوبارہ آرٹیکل70 کے تحت بل کو دوبارہ ہائوس میںلایا جائے ۔ قائمہ کمیٹی نے وزارت خزانہ کے اعلیٰ حکام کی عدم شرکت پر برہمی کا اظہار بھی کیا ۔

قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں سینیٹرز محسن عزیز ، میاںمحمد عتیق شیخ ، مصدق مسعود ملک ، مشاہد اللہ خان ، محمد اکرم اور ذیشان خانزادہ کے علاوہ ایف بی آر کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی ۔

یہ بھی پڑھیں

مقبوضہ کشمیر میں سربرینکا کی طرز پر نسل کشی کا خطرہ ہے، عمران خان

8 لاکھ بھارتی فوج نے 80 لاکھ کشمیریوں کا محاصرہ کر رکھا ہے، عالمی برادری …