موجودہ حکومت تیتر ہے نہ بٹیر‘ سراج الحق

موجودہ حکومت کی مینو فیکچرنگ میں غلطی ہوئی ہے، امیر جماعت اسلامی

لاہور( این این آئی)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ موجودہ حکومت کی مینو فیکچرنگ میں غلطی ہوئی ہے، اب یہ آئوٹ آف ڈیٹ معجون مرکب ہے، جب تک بنیادی خرابی دور نہیں ہوتی حکومت چل نہیں سکے گی، مہاراجوں کا نظام اب مزید چلنے والا نہیں ، عدالتوں میں انصاف ہے نہ حقیقی احتساب اور نہ ڈالروں کی بارش ہوئی ، یہ آمریت ہے نہ جمہوریت یہ حکومت وقت سے پہلے ایکسپوز ہوگئی ہے

جمعیت نے پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کی ہمیشہ حفاظت کی ہے ، اب نوجوانوں کو آگے بڑھنااور پروپیگنڈے کے زور پر جن نوجوانوں کو سراب کے پیچھے لگایا تھا ان کو حقیقی تبدیلی کا راستہ دکھانا ہوگا ، طلبہ یونینز بحال کی جائیں۔

ان خیالات کااظہار انہوںنے جامعہ پنجاب میں اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے سالانہ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجتماع سے اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم اعلیٰ محمد عامر و دیگر نے بھی خطاب کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ سابقہ حکومتیں آدھا تیتر اور آدھا بٹیر ہوتی تھیں مگر موجودہ حکومت تیتر ہے نہ بٹیر ۔

حکومت نے ملک و قوم کے مستقبل کو مایوسی کے اندھیروں میں دھکیل دیا ہے ۔ معیشت کو آئی ایم ایف ، تعلیم کو این جی اوز اور ہسپتالوں کو ٹھیکیداروں کے حوالے کردیا گیاہے ۔

آئی ایم ایف نے معاشی اداروں میں اپنے ملازموں کو لا کر بٹھا دیاہے جو رات دن بس یہی پلاننگ کرتے ہیں کہ پاکستانی عوام کا خون کس طرح نچوڑناہے ۔

ظالمانہ ٹیکس لگائے جارہے ہیں ۔

ایسے ایسے ٹیکس متعارف کروائے گئے ہیں جن کا کبھی کسی نے نام تک نہیں سنا تھا اور دنیا کے کسی ملک میں بھی اس طرح کے ٹیکسوں کے نفاذ کا تصور نہیں کیا جاسکتا ۔

انہوں نے کہاکہ حکومت کی معاشی پالیسیوں کی وجہ سے ملکی معیشت کا بھٹہ بیٹھ گیاہے ۔ پورا نظام وینٹی لیٹر پر ہے جونہی وینٹی لیٹر ہٹایا گیا یہ دھڑام سے نیچے آ گرے گااور کسی کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا ۔

یہ بھی پڑھیں

وزیراعظم کو دورہ کوئٹہ پر دی گئی بریفنگ ناقص تھی ،اختر جان مینگل

کوئٹہ(آن لائن) بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ روکن قومی اسمبلی سردار اختر جان مینگل نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔