اے این پی بلوچستان کا اشرف غنی،عبداللہ عبداللہ کے مابین تنازعات خاتمے کا خیر مقدم

تمام متحارب گروہوں کے ساتھ بھی افغان امن مذاکرات کو یقینی بنانے کیلئے آگے بڑھنا ہوگا ،صوبائی بیان

کوئٹہ(آن لائن)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی بیان میں افغان صدر ڈاکٹر محمد اشرف غنی اور صدارتی امیدوار ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ کے درمیان حکومت کے تشکیل کے وقت جاری تنازعات کے خاتمے کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسے افغانستان میں جاری کشیدگی کے خاتمے پائیدار اور دیرپا امن کے قیام میں معاون ومددگار عمل قراردیا گیا اسی طرح تمام متحارب گروہوں کے ساتھ بھی افغان امن مذاکرات کو یقینی بنانے کیلئے آگے بڑھنا ہوگا،

افغان قومی زعما پر مشتمل قومی مصالحتی جرگہ کی مستقبل میں دوررس اثرات مرتب ہوں گے خپلواک جمہوری مستحکم افغانستان نہ صرف افغان اولس کی ترقی خوشحالی کا ضامن ہے بلکہ پڑوسیوں سمیت خطے کی پائیدار امن کے قیام کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی دفتر باچاخان مرکز سے جاری کردہ صوبائی بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان حکومت اور اپوزیشن کے درمیان جاری تنازعات کا خاتمہ خوش آئند قدم ہے افغان قومی رہنماں پر مشتمل جرگی نے کشیدگی کے خاتمے میں نمایاں کردار ادا کیا ہے جس پر وہ مبارکباد کے مستحق ہیں امید کی جانی چاہئے کہ اب افغانستان کی حکومت اور متحارب افغان دھڑوں کے درمیان بھی انٹرا افغان ڈائیلاگ شروع کرنے اور مستقل جنگ بندی کیلئے اقدامات اٹھائے جائینگے جونہ صرف جنگ وجدل سے بیزار افغان عوام کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل رہیگا بلکہ خطے میں پائیدار امن کے قیام ترقی و خوشحالی کیلئے بھی ازحد ضروری قرار دیا گیا

بیان میں اس امر پر زور دیا گیا کہ جنگ وجدل کشت وخون سے بیزارافغان اولس  دنیا کے دیگر ترقی یافتہ ممالک کیعوام کی طرح بنیادی انسانی حقوق علم وہنر کے حصول کے متمنی ہے اور مزید تباہی و بربادی کا سکت نہیں رکھتے  بیان میں اس امید کا اظہار کیا گیاکہ افغان حکومت اور متحارب دھڑوں کے درمیان انٹرا افغان ڈائیلاگ بھی کامیابی سے ہم کنار ہوں گے اور اس کے لیے تمام فریقین کو افغانستان کی بہتر مستقبل افغان اولس کی ترقی خوشحالی کومد نظر رکھنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں

شوگر مافیا کیخلاف کاروائی نہ ہوناحکومت کے کمزور ہونے کی دلیل ہے، سراج الحق

شوگر،آٹا اور ڈرگ مافیا کو اطمینان ہے کہ ان کے خلاف کوئی ایکشن نہیں ہوگا …