تخلیق مادری زبان ہی کی مرہون منت ہے، اے این پی بلوچستان

بچوں کو ابتدائی تعلیم مادری زبان میں دینا وقت کی ضرورت ہے، جنرل سیکرٹری مابت کاکا

کوئٹہ(نمائندہ خصوصی)عوامی نیشنل پارٹی صوبہ بلوچستان کے جنرل سیکرٹری مابت کاکا نے کہا ہے کہ اس امر پر اتفاق پایا جاتا ہے کہ تخلیق مادری زبان ہی کی مرہون منت ہے مادری زبان کی بدولت ہی انسان اپنی ثقافت اور تہذیب و تمدن سے منسلک اور مادری زبان کسی قوم کے ثقافتی ورثے کی بقااورترویج کی ضمانت ہوتی ہے،فکر باچاخان انجمن اصلاح الافاغنہ سے لیکر عوامی نیشنل پارٹی تک پشتو زبان کی ترویج و اشاعت کے لیے سر گرم عمل رہے پشتونوں کے مشترکہ گھر باچاخان مرکز سے پشتون مجلہ شہباز اخبارامن ٹی وی کے ساتھ ساتھ پشتوزبان کے ادیب شعرا، لیکوال تاریخ دان پشتوزبان کی ترویج میں پیش پیش ہے جو حوصلہ افزاکاوشیں ہیں

ان خیالات کااظہار انہوں نے مادری زبانوں کے عالمی دن کے موقع پر عوامی نیشنل پارٹی ضلع کوئٹہ کے زیر اہتمام باچاخان مرکز میں تقریب سے خطاب کے دوران کیا تقریب سے قائم مقام ضلعی صدر حاجی شان عالم کاکڑ عین الدین ترین ثنااللہ کاکڑ اخلاق بازئی ندیم کاسی نے بھی خطاب کیا

انہوں نے کہا کہ قومی شناخت او ر تہذیبی و ثقافتی میراث کے طور پر مادری زبانوں کی حیثیت اور اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا، آج دنیا میں وہی اقوام ترقی کے معراج چھو رہی ہیں جنہوں اپنی قومی شناخت کی ترویج کیلئے کوششیں اور جدوجہد کی ہیں اور اپنی آنے والی نسلوں کو یہ میراث امانت کے طور پر منتقل کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ دُنیا بھر کے ماہرین اس بات پر متفق ہے کہ مادری زبان ہی تخلیق زبان ہے بچوں کو ابتدائی تعلیم مادری زبان میں دینا ضروری ہے اور دُنیا بھر میں ترقی یافتہ ملکوں کی ترقی اور سائنسی استعداد کا راز اسی حقیقت میں مضمر ہے

انہوں نے کہا کہ نئی نسل کو پشتو زبان سے روشناس کرانا وقت کی اہم ضرورت ہے اور اس سلسلے میں شاعروں، ادیبوں اور سیاسی کارکنوں سمیت تمام لوگوں کو اپنا بھرپور کردار ادا کرنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں

حکومت کو بلدیاتی انتخابات سے بھاگنے نہیں دیں گے، مشتاق خان

موجودہ حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ، معیشت کی بینڈ بجادی گئی ، یومیہ …