بیروزگاری کے طوفان میں سفید پوشی کو قائم رکھنا مشکل ہوگیا، سراج الحق

پشاور(شہباز نیوز)امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہاہے کہ وزیراعظم کو عوام کا احساس ہوتا تو بات اب دعوئوں اور اعلانات سے عمل کی طرف جا چکی ہوتی ۔

حکومت حالات کی تبدیلی کی بجائے صرف سرکاری افسروں اور وزراء کی تبدیلی کو کارنامہ سمجھتی ہے ۔ جتنی بار وزیراعظم نے نوٹس لیا اتنی دفعہ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ۔وزیراعظم نے کشمیر یوں کا مقدمہ لڑنے کی بجائے پسپائی اختیار کی اور کشمیر پلیٹ میں رکھ کر انڈیا کے حوالے کردیا ۔ آج بھی مظلوم کشمیری پاکستان کی طرف دیکھ رہے ہیں ۔ جماعت اسلامی لوگوں کے دلوں پر دستک دے کر زندگیوں میں حقیقی انقلاب کے ذریعے تبدیلی لاناچاہتی ہے ۔

آئیے آج ہم اللہ سے وعدہ کریں کہ اس کے علاوہ کسی کی بندگی نہیں کریں گے اور اس بات پر کامل یقین ہوناچاہیے کہ صرف اللہ ہی رازق ، عزت دینے والا اور زندگی دینے والاہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے ضلع راجن پور کے دورہ کے دوران فاضل پور میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو اور کوٹ مٹھن شریف قصر فرید میں استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

اس موقع پر امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب رائو ظفر اقبال ،امیر ضلع راجن پور ڈاکٹر عرفان اللہ ملک، خواجہ معین الدین محبوب کوریجہ اور دیگر بھی موجود تھے ۔ سراج الحق نے کہاکہ کلمہ طیبہ انسان کو مزاجی خدائوں سے بے نیاز کر تاہے ۔ اگر فرد اکیلا ہوتو لشکر بنتے ہیں ، کمزور ہو تو طاقتور بن جاتاہے ۔ ہم دنیا میں موجود استعمار کے بت کی غلامی نہیں کریں گے بلکہ اللہ کی غلامی کرتے ہوئے اپنے قائد و رہبر حضرت محمد ۖ کی سنت کی پیروی اختیارکریں گے ۔ انہوں نے کہاکہ اللہ اور رسول ۖ کے احکامات جہاں جہاں واضح ہو جائیں وہاں پھر کوئی عقل ، پارلیمنٹ ، نظام ، فرد ، پارٹی یا کوئی اور کسوٹی باقی نہیں رہتی ۔

انہوں نے کہاکہ آئیں اللہ کی بندگی کریں اسی میں آزادی کا حقیقی پیغام ہے ۔ سٹیٹ بینک آرڈی نینس میں ترمیم کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہاکہ ملک کا سب سے اہم ادارہ سٹیٹ بینک اس آرڈی نینس پر عملدرآمد کے بعد پاکستان کا نہیں بلکہ آئی ایم ایف کا ذیلی ادارہ ہوگا اور اس کی ہدایات اور احکامات کا پابند بن جائے گا، پاکستانی عوام سے پیسہ نچوڑ کر آئی ایم ایف کے مطالبات پورے کرنا اس کی ذمہ داری ہوگی ۔

ہم اس آرڈیننس کو مسترد کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ فوری طور پر اس کو واپس لیا جائے ۔سراج الحق نے صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ ملک میں مہنگائی ، بے روزگاری کے طوفان میں سفید پوشی کو قائم رکھنا مشکل ہوگیاہے ۔ وزیراعظم اپنے وعدوں پر عمل کرتے تو عوام اپنی پریشانیوں کی وجہ سے خود کشیاں کرنے پر مجبور نہ ہوتے ۔ پاکستان دنیا کا 2.7 فیصد سونا رکھنے والا ملک ہے جبکہ دال پیدا کرنے میں تیسرے ، گندم میں پانچویں ، گنا پیدا کرنے میں آٹھویں نمبر پر ہے اس کے باوجود مختلف اجناس بھارت سے درآمد کرنے کی بات کی جارہی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

عوام مزید تبدیلی کے جھانسے میں آنے والے نہیں، غلام بلور

پشاور(وقائع نگار)عوامی نیشنل پارٹی کے بزرگ رہنما اور سابق وفاقی وزیر حاجی غلام احمد بلور …