اپوزیشن جماعتیں متحد ہونے جارہی ہیں، عبدالغفور حیدری

شیرشاہ میں ختم نبوت کانفرنس، پی پی رہنما اکبرخان ساتھیوں سمیت جے یو آئی میں شامل

کراچی (این این آئی) جمعیت علماء اسلام کے مرکزی جنرل سیکرٹری سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہاہے کہ اپوزیشن جماعتیں متحد ہونے جارہی ہیں، اے پی سی میں مضبوط فیصلے کئے جائیں گے، فرقہ واریت مذہبی طبقے کی نہیں حکمرانوں کی ضرورت ہے،ختم نبوت قانون کا تحفظ سب کا فرض ہے، مقدس ہستیوں کی توہین ناقابل برداشت ہے، کراچی کی جداگانہ حیثیت مسائل کا حل نہیں، سندھ تقسیم کرنے کی سازشوں کا مقابلہ کریں گے۔ 29 اکتوبر کو کراچی میں تاریخ ساز جلسہ کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جے یو آئی ضلع غربی کے تحت شیرشاہ میں منعقدہ عظیم الشان ختم نبوت کانفرنس خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کانفرنس سے جے یو آئی سندھ کے جنرل سیکریٹری مولانا راشد محمود سومرو، مولانا عبد الکریم عابد، اسلم غوری، سابق پارلیمانی لیڈر مولانا عمر صادق، مولانا شیریں محمد، مولانا فخرالدین رازی، قاری نصیرالدین سواتی، مولانا نورالحق، مولانا عبدالقادر بلوچ، مفتی فضل مولاجدون، ڈاکٹر اکبرخان، حافظ محمدنعیم، حاجی محمود خلجی، مولانا محمد بلال اور مفتی فیض الحق نے خطاب کیا۔ اس موقع پربزنس فورم سندھ کے صدر امین اللہ، مولانا سعید سرور، بابر قمر عالم، حافظ حبیب الرحمن خاطر،نیک امان اللہ مسعود، ثناء اللہ شنواری، محمد اسرارالدین، زاہد شاہ ہاشمی، ناصر راجپوت، ذوالفقار،سیف اللہ محسود، نثارحنفی، محمد عطاء اللہ، قاری عبدالقدیم سمیت شیرشاہ کے جید علمائے کرام، مہتممین مدارس، ائمہ مساجد اور سماجی و سیاسی رہنما بھی موجودتھے، اس موقع پر انجمن تاجران شیرشاہ کے جنرل سیکرٹری اور پی پی پی کے سینئر رہنما ڈاکٹر اکبرخان نے 25 ساتھیوں سمیت جے یو آئی میں شمولیت کا اعلان کیا، امیر ضلع مولانا عمر صادق نے مہمانوں اورشرکاء کا شکریہ ادا کیا۔ جلسہ عام میں ہزاروں افراد شریک ہوئے۔

جلسہ عام سے قبل شیرشاہ کی تمام چوراہوں و شاہراہوں کو پرچم نبوی سے سجایا گیا جبکہ جگہ جگہ خیر مقدمی بینرز اور قد آور پینافلیکس لگائے گئے تھے۔ قائدین کو جلوس کی شکل میں جلسہ گاہ تک لایا گیا اور پرتپاک استقبال کیا گیا۔ مولانا عبدالغفور حیدری نے مزید کہا کہ موٹر وے سانحہ نہایت افسوسناک حکومتی غفلت اور نااہلی کا آئینہ دار ہے،معاشرے میں لوگوں کی جان ومال اور عزت آبرو کی حفاظت کے لئے اسلام کے نظام حدود و تعزیرات کو نافذ کرنے کی ضرورت ہے۔،ملک کے نظریاتی و جغرافیائی سرحدات کے حفاظت کے لئے کٹھ پتلی حکومت کا خاتمہ ناگزیر ہوچکا ہے، موجودہ حکومت یہودیوں اور قادیانیوں کے ایجنڈے کی تکمیل کے لئے ملک کے آئین اور قانون کو بلڈوز کر رہی ہے، لیکن جے یو آئی ملک کے آئین اور قانون کے تحفظ کے لئے میدان میں نکلی ہے اور عوامی طاقت سے ان کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملادیں گے۔ علامہ راشد محمود سومرو نے کہا کہ کراچی کو صوبہ سندھ سے الگ کرنے کی سازش ناکام بنادیں گے، پی پی پی حکومت کی نااہلی و بدانتظامی کی وجہ سے وفاق کو، کراچی کو الگ حیثیت دینے کی جرأت پیداہوئی۔ کراچی کی جداگانہ حیثیت مسائل واحد حل نہیں اور نہ ہی جداگانہ حیثیت برداشت کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

اے پی سی کے بعد سے حکومتی ایوانوں میں زلزلہ برپا ہے، احسن اقبال

لاہور: مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ اے پی …

%d bloggers like this: