عوام کا حق حکمرانی تسلیم کئے بغیر مسائل کا حل ممکن نہیں، مابت کاکا

کوئٹہ(نمائندہ شہباز) عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ جب تک ملک میں عوام کا حق حکمرانی تسلیم نہیں کی جاتی مسائل کا حل ممکن نہیں گزشتہ 73 سالوں سے نت نئے تجربوں کے زریعے جمہوریت اور جمہوری اداروں کی راہ میں روڑے اٹکائے جارہے ہیں حقیقی جمہوری سیاسی جماعتوں کو کمزور کرنے اور ان کے مقابلے میں ”الیکٹیبلز” جیسی اصطلاح متعارف کرنے کی کل اور نہ آج حوصلہ افزا نتائج برآمد ہوسکیں گے 85 میں فوجی آمر ضیاالحق نے ترقیاتی فنڈز کے نام سے کرپشن و کمیشن کے ناسور سے سیاست اور پارلیمنٹ کو بے توقیر کردیا.

عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام 8 اکتوبر کو قلعہ سیف اللہ میں جلسہ عام اور اس میں پارٹی کی مرکزی وصو بائی قیادت امیر حیدر خان ہوتی میاں افتخار حسین ایمل ولی خان اصغر خان اچکزئی سمیت دیگر رہنماؤں کی شرکت سے صوبے کی مجموعی سیاسی صورتحال پر دوررس مثبت اثرات مرتب ہوں گے پارٹی ذمہ داران اور کارکن بھرپور تیاریاں شروع کردیں.

ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری مابت کاکا صوبائی سینئر نائب صدر نوابزادہ ارباب عمر فاروق کاسی صوبائی نائب صدر اصغرعلی ترین صوبائی جوائنٹ سیکرٹری حاجی ہدایت اللہ کاکڑ نے ضلع قلعہ سیف اللہ کے ضلعی صدر حاجی عبدالمالک کاکڑ جنرل سیکرٹری حاجی احسان اللہ کاکڑ کی قیادت میں ضلعی کابینہ کے ارکان سے ارباب ہاؤس میں ملاقات کے دوران کیا .

اس موقع پر صوبائی سالار اعلی عبدالغنی دارنی بھی موجود تھے اس سے پہلے ضلعی کابینہ نے 8اکتوبر جلسہ عام بارے مختلف تجاویز اور آراء پیش کیں اور فعال ومنظم تنظیم کی ضرورت پر زور دیتے کہا گیا کہ بنیادی یونٹ سے تحصیل ضلع تک تمام ذمہ داران جلسہ عام کامیابی بارے بھرپور تیاریاں جاری رکھنے کیلئے پرعزم ہے .

اس حوالے سے عنقریب صوبائی ذمہ داران تحصیل مسلم باغ تحصیل قلعہ سیف اللہ جنرل باڈی اجلاسوں میں شرکت جلسہ گاہ معائنہ اور جلسہ سے متعلق مختلف انتظامی کمیٹیاں تشکیل دیتے ہوئے جلسہ کی کامیابی کیلئے مہم کا باقاعدہ آغاز کرینگے۔

یہ بھی پڑھیں

کسی سے ڈرنے والے نہیں ‘حکومت کا دھڑن تختہ کرینگے ‘مولانا فضل الرحمن

FATF کے حکم پر قانون سازی کرناپارلیمنٹ کی آزادی چھیننے کے مترادف ہے’گیدڑ بھبکیاں اپنے …

%d bloggers like this: