پی ڈی ایم کی اب کوئی حیثیت باقی نہیں رہی‘ ایمل ولی خان

تنگی(نمائندہ شہباز) پی ڈی ایم بنانے میں عوامی نیشنل پارٹی کا اہم کردار تھا لیکن بد قسمتی سے پی ڈی ایم میں موجود بعض سیاسی جماعتوں کو کہیں سے ہدایات ملنے شروع ہو گئیں جس پر عوامی نیشنل پارٹی کو تحفظات تھے ‘اس کے علاوہ عوامی نیشنل پارٹی ایک سیاسی جماعت ہے کسی کے دبائو پر شوکاز نوٹس کو پارٹی اپنی تذلیل سمجھتی ہے اور یہی وجہ تھی کہ ہم نے پی ڈی ایم تحریک کو الوداع کہا‘ اب پی ڈی ایم کی کوئی حیثیت باقی نہیں رہی‘

ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ‘ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم سلیکٹڈ حکومت کیخلاف ایک تحریک تھی جس پر 10سیاسی جماعتوں نے متفقہ طور پر عہد کیا تھا کہ ہم نااہل حکومت کیخلاف عوامی تحریک چلائیں گے لیکن بعض وجوہات کی بناء پر ہم نے پی ڈی ایم سے ر اہیں جدا کردیں ‘

انہوں نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کی ایماء پر پی ڈی ایم میں موجود سیاسی جماعتوں نے عوامی نیشنل پارٹی کو شوکاز نوٹس بھیجا جسے ہم اپنا تذلیل سمجھتے ہیں‘ ایمل ولی خان نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی افغانستان کو پر امن دیکھنا چاہتی ہے ‘ہماری خواہش ہے کہ افغانستان میں امن قائم ہو تاکہ افغانستان کے عوام مزید دہشتگردی کا شکار نہ بنے ‘

انہوں نے کہا کہ ریاست نے 2018ء کے الیکشن میں باقاعدہ سیاسی رہنمائوں کو ہدایات دی تھی کہ تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کریں ‘ عوامی نیشنل پارٹی پختونوں کے حقوق کی ترجمان سیاسی جماعت ہے اور ہمارے دروازے تمام پختونوں کیلئے کھلے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں

پی ڈی ایم میں پیپلزپارٹی کی واپسی اور اتحاد دوبارہ فعال کرنےکی تیاریاں

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پی ڈی ایم …