صوبے میں کرونا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ہے،شوکت یوسفزئی

پشاور(این این آئی) خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ صوبے میں کرونا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ہے، وزیراعلیٰ محمود خان کے دور میں پسماندہ علاقے ترقی کر رہے ہیں، آٹا بحران مصنوعی تھا جس پر قابو پا لیا گیا ہے، مہنگائی کا احساس ہے 3 ماہ بعد حالات ٹھیک ہو جائیں گے، کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے وزیراعلیٰ نے سیکرٹری ہیلتھ کو خصوصی ہدایات جاری کی ہیں ملکی معاشی صورتحال بہتری کی سمت گامزن ہے ۔مولانا فضل الرحمان عوامی حقوق کیلئے نہیں بلکہ ذاتی مفادات کیلئے حکومت کی مخالفت کر رہے ہیں.

ان خیالات کااظہارانہوں نے سوات پریس کلب کے دورے کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی پر تین وزراء کو پارٹی کی اعلیٰ قیادت نے برطرف کیا تھا اور اب اُن کے پاس بحالی کا بھی اختیار ہے کوئی ذاتی عداوت نہیں وہ ہمارے ساتھی ہیں.

مہنگائی کے حوالے سے اُنہوں نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان کو بھی مہنگائی کا احساس ہے انشاء اللہ تین ماہ بعد یہ مسئلہ بھی حل ہو جائیگا ۔

یہ بھی پڑھیں

کورونا وائرس، ایم پی اے ثمر ہارون بلور کا ٹاؤن1عملے کو خراج تحسین

اے این پی رہنما نے ایڈمنسٹریٹر سلیم خان کو سٹاف کیلئے سینی ٹائزر ، ماسکس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔