پشاور کی میڈیکل ریسرچرز ٹیم کا کورونا پھیلاؤ روکنے کیلئے دوا تیار کرنے کا دعویٰ

پشاور(عبد الرئوف یوسف زئی)پشاور کی میڈیکل ریسرچرز ٹیم نے کورونا وائرس کے مزید کیسز روکنے کیلئے اینٹی وائرل شربت تیار کرلیاہے ۔ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر اسلم پرویز نے ایمرجنسی بنیادوں پر کورونا وائرس کے حملوں کو روکنے کیلئے ایمیون اپ (مدافعت نظام توانا) کرنے کیلئے دوا تیارکی ہے۔ ڈاکٹر اسلم پرویز نے برطانیہ سے میڈیسن میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی ہے اور آج کل حیات آباد کے محمد میڈیکل کمپلیکس میں ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں۔

انھوں نے روزنامہ شہباز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ موجودہ فارمولا کورونا وباء کو مد نظر رکھتے ہوئے تیار کیا ہے اس دوا کو استعمال کرنے والوں کو دو فوائدحاصل ہوتے ہیں ایک جانب ان کا مدافعتی نظام مضبوط ہوگا تو دوسری طرف وائرس کی افزائش کا بھی روک تھام ہوسکے گا۔

انھوں نے کہا کہ موجودہ نازک صورتحال میں اس طرح کی دوا کی اشد ضرورت تھی جس کی وجہ سے عوام کے اندر پیداہونے والی بے چینی کنٹرول ہوسکے۔ اس کے علاوہ بھی ڈاکٹر اسلم پرویزنے کئی دوائیں مقامی طور پر تیارکی ہیں جن کے بہترین نتائج سامنے آئے ہیں۔

کورونا وائرس چین کے شہر ووہان سے شروع ہوا تھا جس نے سینکڑوں انسانی جانیں لی ہیں چین کے بعد سب سے زیادہ متاثر ہونیوالا ملک اٹلی، ایران سمیت برطانیہ، فرانس، جرمنی، سپین اور امریکہ ہیں۔پاکستان میں بھی روزانہ کے حساب سے پازیٹیو کیسز سامنے آتے ہیں مگر حالات ابھی تک کنٹرول میں ہے مگر حکومتی پارٹی ابھی تک کوئی ٹھوس منصوبہ سامنے نہیں لا سکی کیونکہ شادی ہالز، مساجد سمیت بڑے مارکیٹس کھلیں ہیں اور اس کے علاوہ نوجوان میدانوں میں کھیلتے بھی ہیں جس کی وجہ سے وائرس مزید پھیلنے کا شدیدخطرہ موجود ہے اس کے علاوہ بینک کے اے ٹی ایم مشینیں بھی ابھی تک سینی ٹائزڈ نہیں ہیں جو سٹیٹ بنک اور لوکل حکومتوں کی ناکامی ہے۔

محمد میڈیکل کمپلیکس کے سربراہ ڈاکٹر قدیر خان نے کہاہے کہ صوبائی ہیلتھ اتھارٹی نے ایمرجنسی بنیادوں پر اس دوا کو مارکیٹ میں متعارف کرنے کی اجازت دی ہے اور انھوں نے اس خواہش کا بھی اظہار کیاہے جتنا جلد ہو سکے یہ دوا صوبے کے ہر ضلع تک پہنچے انھوں نے کہا کہ اس ضمن میں سب سے پہلے یہ دوا اپنے ہسپتال کے ساتھ بونیر ضلع میں میریضوں کے لئے دستیاب ہوگی اور اس کے بعد ہم صوبے میں اس دوا کو پھیلائیں گے تاکہ لوگوں میں وائرس نہ پھیلے ڈاکٹر اسلم پرویز کا کہنا ہے کہ چونکہ کورونا وائرس سب سے پہلے گلہ اور نظام تنفس پر حملہ کرتا ہے اور اس دوا کے اجزاء بھی خاص کر اینٹی وائرل کو کاؤنٹر کرنے کیلئے شامل کئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن کا بارہواں دن ،شہری محصور، زندگی معطل ہو گئی

پشاور(سٹاف رپورٹر)پشاور سمیت صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن کا بارھواں دن بھی جا ری رہا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔