ضم اضلاع کے جاری اور نئے منصوبوں کیلئے 56 ارب روپے مختص

اسلام آباد (  آن لائن ) وفاقی حکومت نے مالی سال 2020ـ21ء کے بجٹ کے سرکاری شعبہ کے ترقیاتی پروگرام ( پی ایس ڈی پی) کے تحت خیبرپختونخوا کے ضم اضلاع کو قومی دھارے میں لانے کے لیے جاری اور نئے منصوبوں کے لیے 56 ارب روپی مختص کیے ہیں۔

پی ایس ڈی پی کے اعداد و شمار کے مطابق بجٹ میں سرکاری شعبہ کے ترقیاتی پروگرام کے تحت قبائلی اضلاع میں جاری اور نئے منصوبہ جات کے لیے 56 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں اس ترقیاتی فنڈز سے تعلیم، مواصلات، زراعت، لائیو سٹاک، واٹر سپلائی سکیم سمیت تعمیر نو وبحالی کے منصوبے شامل ہیں جبکہ ضم اضلاع میں بحالی تعمیر نو کے منصوبوں کے ساتھ آپریشن سے متاثرہ کاروباری مراکز کی تعمیر، توانائی، تعلیم، صحت، مواصلات، کیڈٹ کالج کی تعمیر، زراعت، لائیوسٹاک، واٹر سپلائی سکیم اور غربت کے خاتمے سمیت قبائلی عوام کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کے لیے فنی تربیت کے منصوبوں پر56 ارب روپی خرچ کئے جائیں گے جبکہ گزشتہ مالی سال 2019ـ20ء میں ضم اضلاع کے لیے 152ارب روپے مختص کئے گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

ملگری لیکوالان کی آرگنائزنگ کمیٹی کا پہلا اجلاس،آئین و منشور کیلئے کمیٹی تشکیل

صدارت خادم حسین نے کی ،کمیٹی میں حیات روغانی، روخان یوسفزے، بیدار اصلزے اور طارق …