اے این پی کے زیر اہتمام صوبے بھر میں لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرے

صوابی‘سوات‘باڑہ ‘ کوہاٹ بنوں‘ پارا چنار‘ باجوڑ‘ لکی سمیت مختلف اضلاع میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی گئیں‘ حکومت کیخلاف نعرے بازی

صوابی‘باڑہ ‘کوہاٹ‘بنوں ‘پاراچنار‘سوات‘باجوڑ‘ لکی(نمائندگان ) عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام اے این پی بلوچستان کے صوبائی رہنماء اسد اللہ خان اچکزئی اور دیگر لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے خیبر پختونخوا کے مختلف اضلاع میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی گئیں ‘

اس موقع پر شرکاء نے حکومت کیخلاف نعرے بازی بازی کرتے ہوئے لاپتہ افراد کی بحفاظت بازیابی کیلئے فوری اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا کوہاٹ میں ریلی کے شرکاء سے خطاب میں عوامی نیشنل پارٹی کے کلچر ونگ کے سیکرٹری سید لائق باچا، ضلعی صدر جاوید خٹک و دیگر رہنماؤں نے کہا کہ ملک میں بدامنی اپنے عروج پر ‘لوگوں کو غیر قانونی طور پر لاپتہ کیا جارہا ہے جبکہ آئین پاکستان ہر شہری کو ضمانت دیتا ہے کہ اس کے ساتھ قانون کے مطابق سلوک کیا جائے اس سے قبل طالبان عوام کے اغواء میں ملوث تھے اب یہی کام ریاست کر رہی ہے آخر لاپتہ افراد کی فریاد کس سے کریں‘

پاراچنار پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے آرگنائزنگ کمیٹی ضلع کرم کے چیئرمین سید ذوالفقار علی بھٹو، عابد بنگش، سید جلیل، فاروق احمد اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ مرکزی رہنماؤں کی ہدایات پر لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کئے جارہے ہیں رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ آئین کے آرٹیکل نمبر 4 کے مطابق ملک کے ہر شہری کے ساتھ قانون کے مطابق سلوک کیا جائے اور لاپتہ افراد کو جلد از جلد بازیاب کرایا جائے بنوں میں ممبر صوبائی اسمبلی خوشدل خان ایڈووکیٹ کی قیادت میں کارکنوں نے محلہ باز محمد سے ریلی نکالی ‘شرکاء مطالبات کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے پریس کلب پہنچے جہاں ریلی نے مظاہرے کی شکل اختیار کرلی ‘

اس موقع پر احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے خوشدل خان ایڈوکیٹ‘ ضلعی صدر ملک دلاسہ خان‘ شاہ قیاز باچا ایڈووکیٹ ، ملک نثار خان منڈان ایڈووکیٹ ، عرفان پیرزادہ ایڈووکیٹ، ناصر منڈان ، حکمت پختون ، فہیم آزاد وزیر ایڈووکیٹ، پیر ہارون علی شاہ، ایوب خان ایڈووکیٹ و دیگر کا کہنا تھا کہ ملک میں قانون اور ایک ضابطہ موجود ہے لاپتہ افراد کو قانون کے کٹہرے میں پیش کیا جائے اور اوپن ٹرائل کیا جائے باجوڑ میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے میں اے این پی باجوڑ کے صدر گل افضل، شاہ نصیر خان، ملک عطا اللہ خان، نثار باز، صدیق اکبر، مولانا خانزیب اور دیگر نے خطاب کیا‘

لکی مروت میں ڈسٹرکٹ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرے کی قیادت اے این پی کے صوبائی نائب صدر شاہی خان شیرانی نے کی‘ سرخ پارٹی جھنڈے تھامے مظاہر ین نے بینرز اورپلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر لاپتہ افراد کی بازیابی اور انہیں عدالتوں میں پیش کرنے کے مطالبات درج تھے‘شاہی خان شیرانی، ملک علی سرور خان، ملک ریاض خان اور دیگر مقرین نے کہا کہ حکومت لاپتہ بے گناہ افراد کی فوری اور بحفاظت بازیابی کے لئے اقدامات کرے‘

انہوں نے کہا کہ لاپتہ افراد کی رہائی کے حوالے سے حکومت کی سر مہری دیکھتے ہوئے اب لکی مروت پولیس نے بھی شہریوں کی گمشدگیوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے جسے فوری بند کیا جائے اس کے علاوہ تمام لاپتہ افراد کو بازیاب کرکے عدالتوں میں پیش کیا جائے سوات پریس کلب کے باہر مظاہرے سے ضلعی صدر ایوب خان اشاڑی اور جنرل سیکرٹری شاہی دوران نے خطاب کیا جبکہ اس موقع پر سابق ایم پی اے سید جعفر شاہ ، عبدالجبار خان ، عبدالصبورر خان ، خواجہ خان ، نثار خان ، عبدالکریم خان ، نادرشاہ اور دیگر مقامی قائدین بھی موجود تھے

باڑہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرے کی عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما اعجاز یوسفزئی جبکہ ضلع خیبر سے صدر شاہ حسین شنواری، سینئر نائب صدر شیرین آفریدی، جنرل سیکرٹری محمد صدیق آفریدی، باڑہ صدر عمران، جمرود صدر عمر اور لنڈیکوتل صدر صدر جان سمیت کثیر تعداد میں کارکنوں نے شرکت کی‘

مظاہرین نے احتجاج کے موقع پر نعرہ بازی کی اور ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جس پر لاپتہ افراد کی بازیابی کے حق میں نعرے درج تھے‘ اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ لاپتہ افراد کی بازیابی حکومت کی ذمہ داری ہے‘ تمام زیر حراست افراد کو عدالت میں پیش کیا جائے تاکہ قانون کے مطابق مجرموں کو سزا جبکہ بے گناہ کو رہائی مل سکے ‘

مقررین نے عدالت عظمی سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس لاپتہ افراد کی بحفاظت بازیابی کیلئے سوموٹو ایکشن لے کر تمام افراد کے ٹرائلز لیں تاکہ اس مسئلے کا حل نکل آئے۔

یہ بھی پڑھیں

جنوبی وزیرستان: سکیورٹی فورسز کے آپریشن مطلوب دہشتگرد کمانڈر ہلاک

پشاور: صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع جنوبی وزیرستان میں سکیورٹی فورسز کے آپریشن میں کالعدم …