ملک میں لاقانونیت کی انتہا، لوگ لاپتہ ہورہے ہیں، تشدد زدہ لاشیں مل رہی ہیں، ایمل ولی خان

پشاور:عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ سلیکٹڈ حکمران عوام کی خدمت اور حقوق کی جنگ کی بجائے اپنے لانے والوں کی خوشنودی میں لگے ہوئے ہیں، کرائے کی حکومت نا ہمارے اکابرین نے قبول کی ہے اور نا ہم کریں گے۔

ایمل ولی خان نے کہا کہ مقتدرحلقے ہمیں پارلیمان سے تو باہر رکھ سکتے ہیں لیکن اس مٹی کی سیاست سے باہر نہیں رکھ سکتے، اے این پی کا مقصد اور منشور پختون قوم کے حقوق کا حصول اور خوشحالی ہے ،عوامی نیشنل پارٹی پختونوں کے حقوق کے حصول کی جدوجہد میں صف اول کا کردار ادا کرے گی۔

باچا خان مرکز میں اے این پی کے سابق ضلعی صدر میاں مشتاق کی ساتویں برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی صدر ایمل ولی حان نے کہا ملک میں لاقانونیت اور بدامنی کی انتہا ہے، لوگوں کو لاپتہ کیا جارہا ہے، نوجوانوں کی تشدد زہ لاشیں مل رہی ہیں، یہ کسی بھی طور پر قابل قبول نہیں ہے، پچھلے وقتوں میں پشتونوں کو ذاتی مفادات کے لئے جہاد اور مذہب کے نام پر گمراہ کیا گیا، پشتونوں کو اپنے خلاف ہونی والی سازشوں کے خلاف یکجا ہونا ہوگا اور موجودہ حالات میں پشتونوں کا اتحاد و اتفاق ہی ان کی نجات کی راہ ہے۔

انہوں نے مزید کہاکہ ووٹ کا اختیار پختون قوم کے لئے باچا خان نیپاکستان بننے سے پہلے جیتا تھا لیکن پاکستان بننے کے بعد پشتونوں کو ان کے حقیقی اختیار سے محروم کردیا گیا ہیاور یہی کام پچھلے الیکشن میں عوام کے ووٹوں پر ڈاکہ ڈال کر کیا گیا ، جو لوگ انگریزوں کے وفادار تھے وہ آج پاکستان کے سیاہ و سفید کے مالک بنے ہوئے ہیں، پختون قوم بنیادی انسانی حقوق سے محروم رکھا جارہا ہے، خیبرپختونخوا وافر مقدار میں سستی بجلی اور گیس پیدا کررہا ہے لیکن صوبہ کے عوام ان سہولتوں سے محروم ہیں، دائیوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہے، آٹا، چینی اور دیگر ضروریات زندگی غریب آدمی کی پہنچ سے دور ہوتی جارہی ہیں، پختونوں کی سرزمین معدنی وسائل اور قیمتی لکڑی کے جنگلات سے مالامال ہے لیکن اس پر اختیار کسی اور کا ہے۔

انہوں نے کہا دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اے این پی کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں اور اے این پی ہر اس فرد کو اپنا شہید مانتی ہے جس نے اس خطے میں دہشتگردی کے خلاف جنگ میں اپنی جان کی قربانی دی ہے، عوامی نیشنل پارٹی باجوڑ سے لے کر وزیرستان تک اپنے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے دن مختص کرے گی اور ان کی یاد میں صوبہ بھر میں تقریبات منعقد کرے گی۔

تمام ذیلی تنظیموں اور پارٹی کارکنان کو 20 جنوری سے شروع ہونے والی انجمن اصلاح الافاغنہ کی صد سالہ تقریبات اور باچا خان اور ولی خان کی برسیوں کی تیاریاں تیز کرنی کی ہدایت کرتے ہوئے ایاین پی کے صوبائی صدر نے کہا کہ باچا خان کی شروع کردہ تحریک سو سال بعد آج عوامی نیشنل پارٹی کی شکل میں میدان میں کھڑی ہے اور ہزار مشکلات کے باوجودان کے نظرئیے اور موقف رتی بھر بھی فرق نہیں آیا، انجمن اصلاح الافاغنہ کی صد سالہ تقریبات میں مشاعروں، سٹیج ڈراموں اور سیمینارز کا انعقاد کیا جائے جس کا سلسلہ دسمبر2021 تک جاری رہے گا۔

یا درہے کہ عوامی نیشنل پارٹی نے 23 جنوری کوپشاور میں جلسہ کرنے کا اعلان کر رکھا ہے جس میں صوبہ بھر سے کارکنان کثیر تعداد میں شرکت کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

وزیراعظم اپنے وعدوں اورنعروں سے یوٹرنز لیکر زیرو ہوچکے،سراج الحق

ترقی اور خوشحالی کی متلاشی عوام نے تاریخی دھوکا کھایا ہے،زرعی ملک ہونے کے باوجود …