پشاور جلسہ روکنا جمہوریت پر حملہ، جہاں روکا گیا وہاں دھرنا ہوگا، مولانا غفور حیدری

پشاور: جمعیت علماء اسلام (ف)کے رہنما اور سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے پشاور جلسہ روکنے کے عمل کو جمہوریت پر حملہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جہاں بھی جلسےمیں جانے سے روکا گیا تو وہاں دھرنا ہوگا۔

ہفتہ کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جے یو آئی ف کے کے سیکرٹری جنرل سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ حکومت کورونا کی وجہ سے جلسے پر پابندی لگا رہی ہے، وزیر اعظم نے گلگت بلتستان میں بڑا جلسہ کیا اس وقت کورونانہیں تھا ؟وزرا گلگت بلتستان میں جلسے کئے کورونا نہیں تھا؟وزیر اعظم نے سوات میں جلسہ کیا تو کورونا نہیں تھا ؟پی ڈی ایم کے جلسے سے ہی کورونا پھیلتا ہے۔ ؟

یہ بھی پڑھیں: پی ڈی ایم رہنما عوامی تحفظ سے کھیل رہے ہیں، عمران خان

سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ پی ڈی ایم کارکنوں کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ جو کارکنان کل جلسے میں آرہے ہوں گے تو انہیں روکا گیا تو وہیں دھرنا شروع کردیں،جہاں جہاں روکا جائے گا وہیں دھرنے اور جلسے ہوں گے اور اگر روکا گیا تو یہ جمہوریت پر حملہ ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ پی ڈی ایم کے جلسے حکومت کو کھٹک رہے ہیں ،اپوزیشن کو جلسوں سے روکنا جمہوریت کے منافی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پی ڈی ایم کارکنوں کو پیغام دینا چاہتا ہوں،حکومت پشاور کے آس پاس عوام کو جلسے سے روکے تو جس جگہ روکیں وہی پر احتجاج شروع کر دیں،جو کارکنان جلسے میں آرہے ہوں گے تو انہیں روکا گیا تو وہیں دھرنا شروع کردیں ،جہاں جہاں روکا جائے گا وہیں دھرنے اور جلسے ہوں گے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں: پی ڈی ایم جلسہ، حکومت کا انکار،اپوزیشن کا ہر صورت جلسہ کرنے کا اعلان

جے یو آئی رہنما نے کہاکہ ہم تصادم نہیں چاہتے،ہم نے پندرہ ملین مارچ کئے ایک گملہ نہیں ٹوٹا۔انہوں نے کہاکہ حکومت نے روکنا ہے تو پوری قوت لگا لے،ہم ہر حال میں جلسہ کر کے رہیں گے،پی ڈی ایم کا آئندہ کا شیڈول لاہور کے جلسے میں کیا جائے گا۔

جے یو آئی ف سینیٹر نے کہاکہ حکومت ہمارے راستے میں رکاوٹ نہ بنے،میں ابھی پشاور جا رہا ہوں ، کسی نے روکنا ہے تو روک کر دکھائے۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی کہیں بھی رٹ نہیں ہے ،حکومت کا دوغلاپن ہے ،اپوزیشن کے اندر استعفوں کے معاملے پر اپنی اپنی رائے ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: پشاور جلسے میں دہشتگردی کا خدشہ ،نیکٹا نے تھریٹ الرٹ جاری کر دیا

انہوں نے کہاکہ کورونا وائریس کے بچاو کے حوالے سے جلسوں میں احتیاطی تدابیر ضرور ہونی چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ اپوزیشن میں ہر جماعت کی اپنی اپنی رائے ہوتی ہے،ہم اس بات کہ حق میں ہیں کہ جی بی میں حلف نہ اٹھائیں،ہم آج بھی استعفیٰ دینے کے حق میں ہیں،ہمیں ملکر فیصلہ کرنا چاہیے،جو بھی فیصلہ ہو گا مشاورت سے ہو گا۔

مولانا عبدالغفور حیدری نے کہاکہ احتیاطی تدابیر جلسوں میں ہونا چاہیے۔انہوں نے کہاکہ جلسے کوئی روکے گا تو مقابلے کے لیے کم تیار ہیں۔انہوں نے کہاکہ سلیکٹڈ حکومت کے خلاف جدوجہد جاری ہے،اس سلیکٹڈ حکومت کو ہر حال میں گھر بھیجنا ہے۔

انہوں نے کہاکہ سپیکر کے پارلیمانی اجلاس میں شرکت کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ پی ڈیم ایم اجلاس میں ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ بختاور کی منگنی میں بلانے کے لیے آصف زرداری جو بھی شرط رکھیں ان کی مرضی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ایم ٹی آئی آرڈیننس،نجکاری کے ذریعے اپنوں کو نوازا جارہا ہے، میاں افتخار

نوکریاں دینے والوں نے پاکستان سٹیل ملز میں 4500، ریلوے میں 6000افراد کو بے روزگار …