عرفان اللہ قتل ، دھرنا شرکاء کا کل سے صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاج کا اعلان

باڑہ کے رہائشی سکول ٹیچر کو مبینہ جعلی مقابلے میں قتل کیا گیا، ملوث اہلکاروں کیخلاف کارروائی کی جائے، لواحقین کا مطالبہ

پشاور (نمائندہ خصوصی) باڑہ ضلع خیبر سے تعلق رکھنے والے سکول استاذ عرفان اللہ آفریدی جن کو پشاور میں قتل کیا گیا کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف دھرنے کے شرکاء نے کل سے صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاج کا اعلان کر دیا۔چھ روز سے باڑہ میں جاری احتجاجی دھرنے میں مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے قائدین نے بھی شرکت کی اور دھرنے کے شرکاء سے خطاب کے دوران ان کا کہنا تھا کہ عرفان اللہ آفریدی کے قتل میں ملوث اہلکاروں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے

تاہم شرکاء کے مطابق حکومت کی جانب سے ابھی تک ان سے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا اور اسی لئے احتجاجی دھرنا صوبائی اسمبلی کے سامنے لے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

دتہ خیل قبیلے کی معاوضوں کی عدم فراہمی کیخلاف احتجاجی تحریک شروع کرنیکی دھمکی

دہشت گردوں کیخلاف آپریشن سے ہونے والے نقصانات کے ازالے کیلئے فوری طور پر سروے …