مہمند، لاک ڈاؤن کے دوران ذخیرہ اندوز اور گرانفروش سرگرم، انتظامیہ خاموش

20 کلو گرام آٹے کے تھیلے میں 200 روپے، گھی میں 100 روپے، چینی کے فی کلو میں 5 روپے تک خودساختہ اضافہ کردیا گیا

مہمند(نمائندہ شہباز)آزمائش کی اس گھڑی میں ناجائز منافع خوروں نے ذخیرہ اندوزی شروع کردی ہے۔ اشیاء خوردونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگی ہے، عام آدمی صورتحال سے انتہائی پریشان دکھائی دے رہا ہے جبکہ مقامی ضلعی انتظامیہ اشیاء خوردونوش کی قیمتیں کنٹرول کرنے میں ناکام نظر آرہی ہے۔

ضلع مہمند کے مختلف تمام بڑے بازاروں ، یکہ غنڈ، میاں منڈی، غازی بیگ ،خاخ ،لکڑو، مامدگٹ ، آٹا اور دیگر علاقوں میں آزمائش اور مصیبت کی گھڑی میں ناجائز منافع خوروں اور دکانداروں نے غریب عوام کی چمڑی ادھیڑکر رکھی ہے کیونکہ لاک ڈاؤن کا سنتے ہی ضلع کے بازاروں میں آٹے کی قیمت 1150 روپے،گھی کا ڈبے میں 100روپے ، چینی فی کلو پانچ روپے، ٹماٹر فی کلو پچاس روپے ، پیاز فی کلو 80روپے اوراسی طرح تمام اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں خود ساختہ طریقے سے اچانک ریکارڈ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

اس پریشان کن صورتحال سے غریب دہاڑی کرنے والا طبقہ ہاتھ جوڑ کے بیٹھنے لگا ہے جبکہ اُن کا کو ئی پوچھنے والا نہیں ہے ۔اس ضمن میں بین الاضلائی ٹریفک بند کرانے سے دیگر خوراکی اور غذائی اجناس کی قیمتوں میں بھی اچانک اضافہ ہونے لگا ہے ۔

اس سلسلے میں علاقے کے غریب عوام نے مقامی ضلعی انتظامیہ اور اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ حالات کی سنگینی کا نوٹس لیکر غریب عوام کی حالت زار پر رحم کریں۔

یہ بھی پڑھیں

ضلع دیر لوئر میں25 کوروناوائرس مریض صحت یاب ، ہسپتال سے ڈسچارج

بلامبٹ (نمائندہ شہباز) ضلع دیر لوئر میں25 کوروناوائرس مریض صحت یاب ہوکر انھیں ڈسچارج کر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔