چترال ، کورونا وائرس کا ایک اور مشتبہ مریض معائنہ کیلئے پشاو ر منتقل

حنیف اللہ ایک ہفتہ پہلے کراچی سے آیا تھا،ضلع میں کوئی طبی سہولت موجود نہیں

چترال(نمائندہ شہباز) چترال میں کورونا وائرس کے تیسرے مشتبہ مریض کو بھی پشاور ریفرکردیا گیا ہے.

حنیف اللہ نامی طالب علم جو گورنمنٹ ڈگری کالج میں سیکنڈ ائیر کا طالب علم ہے وہ ایک ہفتہ قبل کراچی سے آیا تھا۔ طبیعت خراب ہونے پر اسے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں کورونا وائریس کی تشخیص کی سہولیات موجود نہ ہونے کی وجہ سے اسے پشاور ریفر کیا گیا۔

مریض کے گھر اور رشتہ داروں کے دو گھرانوں میں بھی پولیس اور چترال لیوی پہرہ دے رہے ہیں متاثرہ گھروں میں لوگوں کی آمد و رفت پر پابندی لگائی گئی ہے۔

سماجی کارکن اقبال مراد جن کا تعلق بالائی چترال کے تحصیل تورکہو سے ہے اور بکر آباد میں عرصہ دراز سے مقیم ہے انہوں نے سوشل میڈیا پر چند تصاویر لگائے ہیں جن میں اقبال مراد خود کھڑا ہے اور اس کے گھر کے باہر لان میں ایک پولیس اور تین چترال لیویز اہلکار کرسیوں پر بیٹھ کر پہرہ دے رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ضلع دیر لوئر میں25 کوروناوائرس مریض صحت یاب ، ہسپتال سے ڈسچارج

بلامبٹ (نمائندہ شہباز) ضلع دیر لوئر میں25 کوروناوائرس مریض صحت یاب ہوکر انھیں ڈسچارج کر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔