8سالہ بچے کو قتل سے قبل زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، پوسٹمارٹم رپورٹ

اسد خان کو گلہ دبا کر قتل کیا گیا، پولیس نے جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرلئے

لکی مروت(نمائندہ شہباز) لکی مروت کے علاقے درہ پیزو میں بے دردی سے قتل ہونے والے 8سالہ معصوم اسد خان کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں جنسی زیادتی کی تصدیق ہوگئی ۔اسد خان کی لاش درہ پیزو میں ورغڑ علاقے کے قریب جھاڑیوں سے ملی تھی جسے پولیس نے تحویل میں لے کر مقامی ہسپتال منتقل کردیا تھا ۔ ذرائع نے بتایا کہ پوسٹ مارٹم کے ذریعے معصوم بچے کے ساتھ جنسی زیادتی کے شواہد ملے ہیں اور اسے گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے ۔

پوسٹ مارٹم کے بعد اسد خان کی لاش ورثاء کے حوالے کردی گئی۔ ان کی نماز جنازہ درہ پیزو کے ملٹری گرائونڈ میں ادا کی گئی جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی بعد میں انہیں مقامی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا۔

دوسری جانب اسد خان کی لاش ملنے کے بعد سوشل میڈیا پر بہیمانہ واردات کی شدید مذمت اور قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ زور پکڑ گیا۔ مختلف سیاسی و سماجی رہنمائوں کا کہنا ہے کہ بچے کے قتل کے بہیمانہ واقعہ سے انسانیت کا سر شرم سے جھک گیا ہے ،صوبائی وزیر سماجی بہبود ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان کے بھائی فیصل انعام اللہ خان نے معصوم اسد خان کے قتل کی پر زور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پولیس قاتلوں تک پہنچنے اور انہیں سزاد دلوانے کے لئے برق رفتار اقدامات لے والدین اپنے بچوں کے حقوق اور ان کی حفاظت کی طرف توجہ دیں، بچوں کے خلاف جرائم اور اس حوالے سے متعلقہ قوانین پر صحیح معنوں میں عملدرآمد کے لئے مربوط اقدامات اور کوششوں کی ضرورت ہے ۔

جماعت اسلامی کے ضلعی امیر حاجی عزیز اللہ خان نے چیف جسٹس آف پاکستان، وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا، آرپی او بنوں اور ڈی پی او لکی مروت سے مطالبہ کیا کہ معصوم بچے کے قاتلوں کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دلوائی جائے۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی غمزدہ خاندان کے ساتھ کھڑی ہے اور انہیں انصاف دلانے کے لئے ہر فورم پر آوازاٹھائے گی۔پاک فائونڈیشن کے ثاقب ظہیر نے درہ پیزو میں معصوم بچے کے قتل پر افسردگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ معاشرے کے تمام مکاتب فکر ایسے واقعات کے رونما ہونے کے ذمہ دار ہیں کیونکہ ظلم اور جبر کے خلاف کوئی آواز نہیں اٹھاتا ۔اسلم خان نے صوبائی وزیر ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان پر زور دیا کہ وہ اسد خان کو انصاف دلانے کے لئے فوری اقدام لیں کیونکہ ایک منتخب نمائندے کی حیثیت سے لوگوں کی آپ سے توقعات زیادہ ہیں۔

عوامی نیشنل پارٹی کے ملک علی سرور خان نے نوجوانوں ، سول سوسائٹی اور سیاسی و سماجی رہنمائوں اور مشران علاقہ پر زور دیا کہ وہ معصوم اسد خان کے ساتھ ہونے والے ظلم کے خلاف اٹھیں، آج چپ رہے تو آئندہ ہر گھر سے ایسی لاشیں اٹھیں گی۔ انہوں نے اعلیٰ پولیس حکام سے افسوسناک واقعہ کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ قاتلوں کو گرفتار کرکے سر عام پھانسی دی جائے۔

یہ بھی پڑھیں

بابڑہ کمیشن رپورٹ کو عام کرکے عوام کو حقیقت سے آگاہ کیا جائے، اعجاز علی

بٹ خیلہ ( نمائندہ شہباز ) بابڑہ کمیشن رپورٹ کو منظر عام پر لاکر سانحہ …

%d bloggers like this: