باجوڑ،محکمہ تعلیم کی غفلت سے بچیوں کا مستقبل داؤ پر لگ گیا

اساتذہ کی غیر حاضری سے گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول ڈمہ ڈولہ گزشتہ 30ماہ سے بند، متعلقہ افسران کے ساتھ بار بار رابطے کئے گئے لیکن وقتی یقین دہانی کے بعد کچھ بھی نہیں ہوتا، علاقائی مشران


باجوڑ(نمائندہ شہباز)2ہزار گھرانوں پر مشتمل تحصیل ماموند کا گائوں ڈمہ ڈولہ ایک وسیع اور گنجان آباد علاقہ ہے، یہاں ایک ہی گرلز پرائمری سکول واقع ہے جو کہ بدقسمتی سے اور ضلعی ایجوکیشن آفس باجوڑ کی نااہلی کی وجہ سے تقریبا30ماہ سے مسلسل بند پڑا ہے۔ ان خیالات کا اظہار علاقائی مشران اور نوجوانوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اس سلسلے میں کئی بار مختلف ایجوکیشن افسران کے ساتھ بار بار رابطہ کیا گیا لیکن وقتی یقین دہانی کے بعد کچھ بھی نہیں ہوتا۔ جی جی پی ایس ڈمہ ڈولہ میں تین سینکشنڈ پوسٹیں ہیں جن میں 2 پی ایس ٹی اور ایک ٹی ٹی ہے ، نااہلی کی انتہاء یہ ہے کہ یہاں کبھی سارے کے سارے ٹیچرز کو ٹرانسفر کیا جاتا ہے اور کھبی تینوں پوسٹوں کو فل کیا جاتا ہے لیکن کوئی بھی ٹیچر ڈیوٹی انجام نہیں دیتا ۔

موجودہ وقت میں صورتحال یہ ہے کہ اب دونوں پی ایس ٹی کو ٹرانسفر کروایا گیا ہے جبکہ صرف ایک ٹی ٹی یہاں پر تعینات ہے جنہوں نے اب تک ڈیوٹی کیلئے آنا ہی مناسب نہیں سمجھا۔

علاقائی مشران اور نوجوانوں نے وزیراعلی محمود خان ، سیکرٹری ایجوکیشن ، وزیر تعلیم اور نیب کے اداروں سے درخواست کی ہے کہ ان 30مہینوں میں جن جن ٹیچرز نے یہاں ڈیوٹیز نہیں دی ہے ، ان سب کی تنخواہوں کو سرکاری خزانے میں واپس جمع کیا جائے اور اس دھندے میں ملوث تمام ایجوکیشن افسران کو بھی سخت سے سخت سزا دی جائے تاکہ ہماری بچیاں تعلیم کے زیور سے محروم نہ رہیں۔

یہ بھی پڑھیں

شانگلہ، نامعلوم افراد کی فائرنگ سے باپ تین بیٹوں سمیت قتل

شانگلہ میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے باپ اور اس کے تین بیٹوں کو …