باجوڑ، انتظامیہ کی کوششوں سے متحارب قبیلے عید تک فائر بندی پر رضامند

باجوڑ(حسبان اللہ)ضلعی انتظامیہ کی کوششیں رنگ لے آئیں ، مورچہ زن گروپوں کے درمیان عید الفطر تک فائر بندی کرادی۔

ڈپٹی کمشنر باجوڑ فیاض شیرپاؤ کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر ناوگئی سب ڈویژن زاہد کمال نے برنگ اصیل ترغاو کا دورہ کیا ۔ جہاں پر دو گروپوں اینگر اور شیر کور نے ایک دوسرے کیخلاف مورچے بنائے تھے اور فائرنگ شروع کرنے کی پوزیشن میں تھے ۔ تاہم اسسٹنٹ کمشنر زاہد کمال نے جرگہ ممبران ملک بہادر شاہ ، گل شالی ، یار خان ، زرچمن ، عزیز ، ثواب خان ، سرورخان ، تاج میر خان ، رشید خان اور دونوں گروپوں کو شیرتوت کے مقام پر طلب کیا۔ انہوں نے دونوں گروپوں کے درمیان عید الفطر تک فائربندی کردی اور دونوں گروپس اس بات پر متفق ہوئے کہ وہ پر امن رہیں گے۔ اے سی ناوگئی نے مسئلے کے پرامن حل کیلئے جرگہ تشکیل دیدیا۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر ناوگئی اور قبائلی رہنما ملک بہادر شاہ نے کہا کہ جنگ جھگڑے کسی بھی مسئلے کا حل نہیں ہیں لہٰذا ہمیں تمام تنازعات بات چیت اور جرگوں کے ذریعے حل کرنا ہوں گے۔ یادرہے کہ دونوں فریقوں کے درمیان کئی سالوں سے دشمنی چلی آرہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پشتو زبان کے معروف شاعر اور ادیب سلیم رازسپرد خاک

چارسدہ شبقدر(نمائندگان شہباز) صدارتی ایوارڈ یافتہ پشتو ادیب، معروف ترقی پسند، انقلابی شاعر، ادیب، صحافی …