ناواگئی کے پہاڑوں میں موجود مشترکہ معدنیات پر بااثر خاندان قابض

غیر قانونی لیز کے ذریعے گزشتہ 35سالوں سے قومی وسائل کو لوٹا جارہا ہے‘مشران کی پریس کانفرنس

باجوڑ(نمائندہ شہباز) ناواگئی کے پہاڑوں میں موجود مشترکہ معدنیات پر بااثر خاندان قابض‘ غیر قانونی لیز کے ذریعے گزشتہ 35سالوں سے قومی وسائل کو لوٹا جارہا ہے ‘فوری جوڈیشل کمیشن تشکیل دیکر غیر قانونی لیز کو ختم کیا جائے بصورت دیگر خون خرابے کی ذمہ داری انتظامیہ پر عائد ہوگی‘

ان خیالات کا اظہار ناواگئی کے مشران حاجی بہادر ، مولانا گل زدین ، حاجی عبدالحمید ، قاضی عبدالمنان ، ملک زیارت خان ، خان محمد ، مولانا بشیر خان ، صاحبزادہ جہانزیب ، میاں رازمحمد اور دیگر نے باجوڑ پریس کلب میں پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا‘

انہوں نے کہا کہ ناوگئی پہاڑوں کی معدنیات کو قبضہ گروپ سے واگزار کیا جائے،ناواگئی کے پہاڑوں میں قیمتی معدنیات کرومائیٹ،جپسم،ماربل،میگنیز ،نفرائیٹ،گروسلراور سوپ سٹون جیسی معدنیات موجود ہیں،مگر معدنیات کے ان خزانوں پر مخصوص طبقے نے ناجائز قبضہ کرکے پوری قوم کو محروم رکھا گیا ہے جوکہ ایکٹ 2019کی خلاف ورزی ہے ‘ قومی مشران نے کہا کہ ناواگئی کے پہاڑوں میں موجود قیمتی معدنیات کا 1989میں بااثر خاندان نے خفیہ اور غیر قانونی لیز کرایا ہے جس کیخلاف ہم نے احتجاج بھی ریکارڈ کرایا ہے ‘2018کے معدنیات قانون کے مطابق یہ لیز غیر قانونی ہے

ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس غیرقانونی لیز کیخلاف فوری طور جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے کیونکہ پہاڑ پوری قوم کے ہیں ہم اس کیخلاف عدالت میں بھی کیس دائر کرچکے ہیں اگر حکومت نے ایکشن نہیں لیا اور کوئی نقصان ہوا تو موجودہ انتظامیہ پر اس کی ذمہ داری عائد ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

باجوڑ، کچے مکان کی چھت گرنے سے 2لڑکیاں جاں بحق، 2زخمی

باجوڑ(نمائندہ شہباز)باجوڑ کے علاقہ بدان میں خستہ حال کمرے کی چھت گرنے کے نتیجہ میں …