بابڑہ کمیشن رپورٹ کو عام کرکے عوام کو حقیقت سے آگاہ کیا جائے، اعجاز علی

بٹ خیلہ ( نمائندہ شہباز ) بابڑہ کمیشن رپورٹ کو منظر عام پر لاکر سانحہ بابڑہ کی حقیقت سے عوام کو آگاہ کیا جائے ، شہدائے بابڑہ کی مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچا ئیں گے.

ان خیالات کا اظہار عوامی نیشنل پارٹی ضلع ملاکنڈ کے صدر اعجازعلی خان نے اے این پی کے جانب سے ملاکنڈ پریس کلب بٹ خیلہ میں شہدائے بابڑہ کی یاد میں منعقدہ مشاعرہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا .تقریب میں تحصیل بٹ خیلہ کے مختلف مقامات سے تعلق رکھنے والے شعراء ادباء نے شہداء بابڑہ کو منظوم اور منثور انداز میں خراج تحسین پیش کی اور تاریخ میں 12 اگست 1948 کی سانحہ کے دن کو سیاہ ترین دن قرار دیا ، مقامی ادبی تنظیم مرستیال لیکول مل ملاکنڈ کے صدر بخت روان عمر خیل اور پروفیسر اقبال شاکر اس موقع پر مہمان خصوصی تھے ، بخت روان عمر خیل، جان بادشاہ ، پروفیسر اقبال شاکر نے سانحہ بابڑہ کی تاریخ پر تفصیل سے روشنی ڈالی نظامت کے فرائض علی محمد سحر اور ندیم سحر نے مشترکہ طور پر انجام دیئے ، مشاعرہ میں علی اکبر ملاکنڈ ، زار یوسفزے، حضرت خان راہی، ارشد کریم شلمانی، ناصر امین، روح الامین روحیل، محمد رسول رسا، لعل باچا ، نور رحیم شالدا، ناموس خان ناموس، معاذ اللہ معاذ ، جنون اور دیگر شعراء نے کلام پیش کئے .

مقررین نے کہا کہ تاریخ میں سانحہ بابڑہ میں رونما ہونے والے ظلم کی مثال نہیں ملتی کیونکہ اس وقت کے حکومت نے شہدا کے ورثاء سے ان گولیوں کی قیمت بھی وصل کئے جو سانحہ کے موقع پر فائر کئے گئے ، مقررین نے کہا کہ باچا خان کی خدائی خدمتگار تحریک کے پیروکاروں نے فلسفہ عدم تشدد پر عمل درامد کرتے ہوئے کبھی اسلحہ نہیں اٹھا یا مگر ہر دور میں ان پر مظالم کئے گئے ، ہم ان شہدا کی قربانی کو ضائع نہیں ہونے دیں گے اور اس مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے جس کے لئے انہوں نے جام شہادت نوش کی ۔

یہ بھی پڑھیں

جمرود،کوکی خیل متاثرین کی عدم واپسی کیخلاف جاری دھرنے کو3ماہ مکمل

باب خیبر کے مقام پر متاثرین کی بحالی و باعزت واپسی کیلئے احتجاجی کیمپ میں …

%d bloggers like this: