ہمیں اپنے اسلاف کی تاریخی حیثیت سے باخبر رہنا چاہیے، فضل الرحمن

کاٹلنگ(نمائندہ شہباز)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی قیادت کی ہدایت پر تحصیل کاٹلنگ کے صدر الحاج فضل رحمن بن یامین کے حجرے میں ایک پروقار تقریب مشاعرہ سانحہ بابڑہ کے شہداء کی یاد میں منعقد کیاگیا جس میں تحصیل کاٹلنگ کے سیاسی ورکرز عوام اور پشتو ادبی جرگہ سے تعلق رکھنے والے شعراء نے شرکت کی۔ تقریب کی صدارت الحاج فضل رحمن بن یامین نے کی جبکہ سٹیج کے فرائض سینئر صحافی محمد ایوب ایوب نے انجام دیے ۔

تقریب میں ضلعی صدر حاجی لطیف الرحمن مہمان خصوصی تھے۔ اے این پی کے ثقافتی ضلعی صدر سجاد ہوتی نے سانحہ بابڑہ پر منظوم خراج عقیدت پیش کی اور قیادت کی جانب سے ادبی سوسائٹی بنانے کا بھی اعلان کیا۔ تقریب میں شرکاء اور شعراء نے سانحہ بابڑہ کی وقوع پذیری اور اثرات کا جائزہ لیا گیا۔

مقررین نے کہا کہ ہمیں اپنے اسلاف کی تاریخی حیثیت اور قربانیوں سے باخبر رہنا چاہیے۔ سانحہ بابڑہ جیسے سانحات قوم کے مورال کو کھوکھلا کردیتے ہیں اور ساری قوم کو ایسی سانحات سے بچنے کے لئے اپنی ائندہ نسلوں کو باخبر رکھ کر باشعور بنا نا چاہیے۔

بن یامین نے کہا کہ اے این پی کی تاریخ خونی قربانیوں سے بھری پڑی ہے۔ اس قربانی سے نوجوان نسل کو بے خبر رکھ کر ہم اصل تاریخ سے غداری کے مرتکب ہورہے ہیں۔ سابقہ ایم پی اے گوہر علی باچہ نے کہا کہ پشتو ہماری قیمتی اثاثہ ہے اور ہم نے ہمیشہ اپنے اقدار اور روایات کی پاسبانی کی ہے ۔ لطیف الرحمن نے کہا کہ اس قسم کے تقریبات میں ہم عوام میں تاریخ زندہ رکھیں گے۔

پروگرام میں پشتو ادبی جرگے کے تمام شعراء نواب خان نواب ، محمد علی چشتی، اکمل لیونے ، خوشحال مفتون، جمیل ناشاد، وسیع الرحمن سیلاب، بخت نواب شیدا، عبد الغفار پرواز، مولانا بخت رازق، عثمان باچہ، محمد ایوب ایوب، فضل نواب کاکا، شیر غنی غنی، شاہد شید پرھر، ڈاکٹر احمد شاہ، ذاکر اللہ ذاکر، سجاد ہوتی، اول نوش ، زرنوش مجبور، حاجی محمد زمان عاجز، حاجی محمد کمال، اور حکیم سید نے بابڑہ کے حوالے سے اپنے منظوم عقید ت پیش کی۔

یہ بھی پڑھیں

لوئر دیر،امن لشکر پر بم حملہ،گاڑی تباہ،تمام افراد معجزانہ طور پر محفوظ

دہشت گردوں نے میدان برجوگوٹ کے علاقے میں سڑک کنارے نصب بم سے امن لشکر …

%d bloggers like this: