ناسا کے روبوٹ روور کی مریخ پر کامیاب لینڈنگ

مریخ پر زندگی کی تلاش پر گیا ناسا کا خلائی روبوٹ روور ’پریزرونس‘ مریخ پر کامیابی سے لینڈ کر گیا ہے۔

مشن نے خلا میں 12 ہزار میل فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر طے کیا۔ پریزروینس مشن پر 2 ارب 20 کروڑ ڈالر کی لاگت آئی۔  مشن کی لینڈنگ کا سگنل ناسا کو موصول ہونے میں 11 منٹ لگے۔

ناسا نے مریخ کی سطح کی تصاویر بھی جاری کر دیں، مشن 249 ملین میل کا سفر طے کر کے اپنی منزل پر پہنچا ہے۔

چھ پہیوں والا روبوٹ دو سال تک گڑھے ڈرل کر کے ماضی میں مریخ پر زندگی کی موجودگی کے ثبوت اکٹھے کرے گا۔

جیزیرو کے بارے میں خیال ہے کہ اس میں اربوں سال قبل ایک بہت بڑی جھیل موجود تھی۔ اور جہاں پانی موجود ہو وہاں زندگی کی موجودگی کا امکان بھی موجود ہوتا ہے۔

مریخ سے پتھروں کے یہ نمونے 2030 کی دہائی میں زمین پر لائے جائیں گے۔

مریخ پر زندگی  کی تلاش ، ناسا کا  مشن مریخ پر لینڈ کر گیا۔۔  مشن نے خلا میں 12 ہزار میل فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر طے کیا۔

گزشتہ برس کرسمس کے موقع پر ناسا نے خلائی مشن پریزرویئرنس کا ایک ٹریلر جاری کیا تھا۔ اس ٹریلر می پریزرویئرنس مریخی جہاز کے اترنے کے تامام اہم مراحل بتائے گئے تھے۔

ان مراحل کو ناسا کے اندرونی حلقوں نے ’خوف کے سات منٹ‘ یعنی سیون منٹ آف ٹیرر قرار دیا تھا۔ اس دوران معمولی سی بھی غلطی پورے منصوبے کو تباہ کرنے کے لیے کافی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

کورونا نے نوجوانوں کی ذہنی صحت پر شدید اثرات مرتب کئے، تحقیق

کراچی(این این آئی)ایک تحقیق کے مطابق عالمی وبا کورونا وائرس نے نوجوانوں کی ذہنی صحت …